ترقی دینے میں بڑی مدد ملے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز پشاور میں پی ایس ڈی پی کے منصوبوں کے حوالے سے منعقدہ اجلاس میں کیااس موقع پر سیکرٹری زراعت و لائیوسٹاک محمد اسرار خان، چیف پلاننگ آفیسر زراعت سید منتظر شاہ ،ڈی جی زراعت ولائیو سٹاک اور فوکل پرسن محکمہ زراعت ڈاکٹر شیر محمد ،ڈی جی ماہی پروری خسرو کلیم، ڈی جی ذرا عت توسیع محمد نسیم خان، ڈی جی زراعت ریسرچ نویداختر ،ڈی جی واٹر منیجمنٹ خورشید ، ڈی جی سائل کنزرویشن یاسین خان، ڈائریکٹر زرعی انجینئر محمود جان بابر، ڈائریکٹر لائیوسٹا ک ملک ایاز وزیر، ڈائریکٹر زراعت وریسرچ رحمت الدین، ڈائریکٹر فشریز ارشد عزیز اور دیگر افسران نے شرکت کی اجلاس میں قومی سطح پر آبی کھالوں کی بہتری کے پروگرام ،خیبر پختونخوا میں پانی کے تحفظ کے منصوبوں، بارانی علاقوں میں چھوٹے اور درمیانے ڈیموں کے ذریعے کمانڈ علاقے بڑھانے کا قومی منصوبہ ،خیبرپختونخوا میں گندم کی پیداوار میں اضافے، صوبے میں چاول کی پیداوار بڑھانے ، خوردنی تیل کی پیداوار میں اضافے، گنے کے فروغ ،غربت کے خاتمے کیلئے مرغبانی بچھڑوں کے تحفظ اور مویشوں کے فربہ کرنے سے متعلق منصوبوں پر تفصیلی غور و خوض کیا۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیر زراعت نے کہاکہ شعبہ زراعت کی ترقی پر صوبائی اور مرکزی حکومت خصوصی توجہ مرکوز کیے ہوئے ہیں اس لیے متعلقہ افسران ایمانداری اور قومی جذبے کے تحت زرعی منصوبوں کو پایا تکمیل تک پہنچائیں اور جہاں کوئی مسئلہ درپیش ہو تو اسے ان کے نوٹس میں لائے تا کہ ترقی کا عمل بغیر کسی خلل کے جاری رہے