کے پی فوڈ اتھارٹی کی ٹیم نے عوامی شکایات پر کاروائی کرتے ہوئے پشاور ٹول پلازہ پر علی الصبح دو ہزار لیٹر مضر صحت دودھ تلف کردیا۔ اسسٹنٹ ڈائریکٹر فوڈ سیفٹی انیلا محبوب کی سربراہی میں فوڈ اتھارٹی ٹیم نے علی الصبح پشاور ٹال پلازے پر ناکہ بندی کی اور پشاور میں داخل ہونے والے تمام گاڑیوں میں موجود اشیائے خوردونوش کی چیکنگ کی۔ انیلا محبوب کا کہنا تھا کہ بارہ گاڑیوں سے دودھ کے نمونےلیے گئے جن کی چیکنگ کرنے کے بعد دودھ میں ملاوٹ پر دو ہزار لیٹر دودھ تلف کردیا گیا۔
دوسری جانب وزیراعلی کی ہدایت پر ملاوٹی گُڑ کیخلاف کاروائی کرتے ہوئے انیلا محبوب اور اسکی ٹیم نے پشاور میں داخل ہونے والے گُڑ سے بھرے سات ڈاٹسن روکے اور گُڑ میں ملاوٹ چیک کرنے کی کوشش کی۔ ڈاٹسن روکنے پر گُڑ منڈی مافیا حرکت میں آگئی اور صبح سویرےموٹروے بلاک کرکے ملاوٹی گُڑ چُڑوانے کا مطالبہ کیا۔ گُڑ منڈی مافیا نے رش اور بلاک روڈ کا فائدہ اٹھاتے ہوئے گاڑیاں چھڑالیں۔ اس بارے انیلا محبوب کا کہنا تھا کہ پشاور گُڑ میں سیزن کے بغیر آنے والے گُڑ میں زیادہ تر کیمیکلز سے بنا ہوتا ہے جو کہ صحت کیلئے مضر ہے جبکہ پچھلے ہفتے وزیراعلٰی پختونخوا محمود خان نے بھی ملاوٹی گُڑ بارے کاروائی کرنے کی ہدایت کی تھی۔