مینجمنٹ سروس کے رولز میں ترامیم کی ہیں جس سے جنرل کیڈر کا بندہ بھی انتظامی عہدوں پر طعینات ہوسکے گا، پوسٹنگ ٹرانسفرز کیلئے پالیسی اور پورٹل بن گیا ہے، پورٹل پر اب تک 2500 درخواستوں پر عملدرآمد ہوچکا ہے، کنٹریکٹ بھرتی کا ہر گز مطلب یہ نہیں کہ ڈاکٹرز کی مستقل بھرتی بند ہے، محکمہ صحت میں جاری اصلاحات بارے سٹیک ہولڈرز کے ساتھ رابطے اور اعتماد سازی کیلئے لائزون کمیٹی تشکیل دی گئی ہے، وزیر صحت و خزانہ تیمور سلیم جھگڑا نے معاون خصوصی برائے اطلاعات بیرسٹر سیف کے ہمراہ اطلاع سیل میں منعقدہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا ہے کہ محکمہ صحت میں انقلابی اصلاحات کا واحد مقصد مراکز صحت کی فعالی اور عوام کو ان کی دہلیز پر علاج معالجے کی سہولیات کی فراہمی ہے۔ اس موقع پر سیکرٹری ہیلتھ طاہر خان اوکرزئی اور ڈی جی ہیلتھ سروسز ڈاکٹر نیاز بھی ان کے ہمراہ تھے۔ میڈیا نمائندوں سے بات کرتے ہوئے وزیر صحت نے کہا کہ مینجمنٹ سروس کے رولز میں ترامیم کی ہیں جس سے جنرل کیڈر کا بندہ بھی انتظامی عہدوں پر طعینات ہوسکے گا۔ آج ہمیں شکایت موصول ہوئی کہ محکمے میں کسی نے ڈاکٹر سے تبادلے کے عوض رشوت لی ہے جس پر سیکرٹری ہیلتھ نے انکوائری بٹھادی ہے لیکن صرف انکوائری کافی نہیں اس ایک کیس کو پورے 80 ملازمین کیلئے مثال بنائینگے تاکہ آئندہ کوئی اس طرح کے اقدام کا مرتکب نہ ہو۔کوئی بھی محکمہ صحت میں سفارش یا سیاسی اثر رسوخ پر آئے گا تو انہیں دیگر ملازمین کیلئے مثال بنادیا جائے گا۔ میڈیا بھی رشوت ستانی کے کیسز سامنے لانے میں مدد کرے۔
انہوں نے بتایا کہ محکمہ ہیلتھ میں اسی ہزار ملازمین ہیں جن کی تقرری اور تبادلے کیلئے پالیسی ترتیب دی گئی ہے اور آن لائن پورٹل بھی بن گیا ہے۔ پورٹل پر اب تک 2500 درخواستوں پر عملدرآمد ہوچکا ہے جبکہ چار سو سے زائد ڈاکٹرز کے تبادلے بھی پورٹل پر بغیر کسی سیاسی اثر رسوخ کے ہوچکے ہیں۔ ڈاکٹرز کے شکایات کے ازالے کیلئے کمپلینٹ مینجمنٹ سسٹم لارہے ہیں تاکہ ڈاکٹرز حضرات اپنے آپ کو محکمے میں محفوظ سمجھے اور کسی قسم کی ہراسمنٹ کا شکار نہ ہو۔