خیبرپختونخوا کے وزیر برائے سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی اور خوراک عاطف خان نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت ضلعی سطح پر سرکاری انتظامی امور کو فائل ٹریکنگ سسٹم پر استوار کرانے سمیت انتظامیہ اور شہریوں کے مابین متعلقہ امور اور خدمات کو کمپیوٹرائزڈ بنانے کیلئے اقدامات اٹھا رہی ہے جن سے نہ صرف ضلعی سطح پر تمام اداروں کی کارکردگی میں بہتری آئے گی بلکہ شفافیت بھی یقینی ہو جائے گی۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلعی سطح پر فائل ٹریکنگ سسٹم متعارف کرانے کے حوالے سے پشاور میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اجلاس میں سیکرٹری محکمہ سائنس وانفارمیشن ٹیکنالوجی مطیع اللہ خان، ضلع پشاور ڈسٹرکٹ کمشنر،ڈپٹی کمشنر مردان، مینیجنگ ڈائریکٹر خیبرپختونخوا آئی ٹی بورڈ اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ اجلاس میں ضلعی سطح پر فائل ٹریکنگ سسٹم اور شہریوں سے متعلقہ خدمات کی فراہمی کو کمپیوٹرائزڈ بنانے کے حوالے سے مختلف پہلوؤں پر تفصیلی بحث کی گئی۔ اس موقع پر عاطف خان کا کہنا تھا کہ پوری دنیا ڈیجیٹل ٹرانسفرمیشن کی طرف جارہی ہے اور وزیر اعظم عمران خان کا وژن ڈیجیٹل پاکستان ہے اس لئے مجوزہ منصوبے کی مدد سے روایتی فائل سسٹم سے چھٹکارا ملے گا اور اور بے جا وقت کی ضیاع کیساتھ ساتھ تاخیری حربوں کا بھی تدارک کیا جائے گا۔ عاطف خان نے متعلقہ حکام کو آزمائشی بنیادوں پر ضلع پشاور اور مردان میں فائل ٹریکنگ سسٹم اور دیگر امور کی کمپیوٹرائزیشن پر ہوم ورک شروع کرنے اور عملی کام کے آغاز کیلئے حتمی سفارشات پر مبنی رپورٹ متعلقہ حکام کو جلد پیش کرنے کی ہدایت کی۔