وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمودخان نے صوبے کے مختلف اضلاع کے دوروں کا سلسلہ جاری رکھتے ہوئے جمعرات کے روز تورغر کا دورہ کیا جہاں اُنہوںنے مختلف ترقیاتی منصوبوں کا سنگ بنیاد رکھا اور جلسہ عام سے خطاب کیا۔وزیراعلیٰ نے ریسکیو1122 سٹیشن کی عمارت کا سنگ بنیاد اور ساڑھے چھ کروڑ روپے کی لاگت سے مکمل کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ وزیراعلیٰ نے 9 کلومیٹر طویل گوریارڈ تا دندہ جپیت روڈ ، 11 کلومیٹر طویل شگئی تا کالش سڑکوں کا بھی سنگ بنیاد رکھا۔ یہ دونوں منصوبے ساڑھے 18 کروڑ روپے کی لاگت سے مکمل کئے جائیں گے ۔ وزیراعلیٰ نے تور غر کے علاقے مدا خیل کو بجلی کی فراہمی کے منصوبے کا افتتاح کیاجو 12 کروڑ روپے کی لاگت سے مکمل کیا گیا ہے ۔ وزیراعلیٰ نے پولیس لائن جدبا میں یادگار شہداءپر حاضری دی اور پھولوں کی چادرچڑھائی ۔اُنہوں نے دورے کے موقع پر سانحہ جٹکہ میں جاںبحق افراد کے لواحقین سے تعزیت کی ۔بعدازاں وزیراعلیٰ نے تور غر میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے متعدد ترقیاتی منصوبوں کا اعلان کیا۔ اُنہوں نے علاقے میں رابطہ سڑکوں کی تعمیر ، واٹر سپلائی سکیمز اور دیگر منصوبوں کیلئے 30 کروڑ روپے کا اعلان کیا۔تور غر میں نادرا اور پاسپورٹ آفس کو جلد فعال بنانے کی یقین دہانی کرائی جبکہ ڈپٹی کمشنر کو ضلع میں فوری نوعیت کے تمام مسائل کی تفصیلات فراہم کرنے کی ہدایت کی ۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ ضلع تور غر کے تمام مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کئے جائیں گے ۔ وزیراعلیٰ نے اپنے خطاب کے دوران کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت تمام اضلاع کی یکساں بنیادوں پر ترقی پر یقین رکھتی ہے ۔ رواں بجٹ میں پسماندہ اضلاع کو دیگر ترقیافتہ اضلاع کے برابر لانے کیلئے 62 ارب روپے کا ڈسٹرکٹ ڈویلپمنٹ پلان متعارف کرایا گیا ہے تاکہ ان اضلاع کی محرومیوں کا ازالہ ہو سکے ۔ وزیراعلیٰ نے کہاکہ عوام کی ایک ایک پائی عوام پر خرچ ہو رہی ہے ۔ نہ خود کمیشن لیتا ہوں اور نہ کسی اور کو لینے دوں گا۔ شفافیت اور میرٹ کی بالاد ستی ہمارے قائد وزیراعظم عمران خان کاوژن اور پارٹی کا منشور ہے اور اس پر ہر صورت عمل درآمد کو یقینی بنائیں گے ۔ اُنہوںنے واضح کیا کہ ترقیاتی منصوبوں کے معیار پر کوئی سمجھوتہ نہیں ہو گا۔ سابق ادوار میں کسی بھی شعبے میں منصوبہ بندی نہیں کی گئی جس کی وجہ سے آج ملک مشکل صورتحال سے دوچار ہے ۔ وزیراعلیٰ کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان ملک کو اس مشکل صورتحال سے نکالنے اور غریب اور متوسط طبقے کو زیادہ سے زیادہ ریلیف دینے کیلئے دن رات کوشش کر رہے ہیں۔ موجودہ حکومت نے عوام کو ریلیف دینے کیلئے احساس پروگرام جیسا غریب پرور اور عوام دوست پروگرام شروع کیا ہے جس کے تحت احساس پناہ گاہ ، احساس لنگر خانہ، احساس آمدن، احسا س کیش ایمرجنسی اور دیگر اقدامات جاری ہیں۔