خیبر پختونخوا کے وزیر سائنس وانفارمیشن ٹیکنالوجی اور خوراک عاطف خان نے کہا ہے کہ حکومت خیبر پختونخوا نے صوبے میں انفارمیشن ٹیکنالوجی سے وابستہ نوجوانوں کے لیے 6 مہینے کی انوویشن فیلو شپ پروگرام کا آغاز کردیا گیا ہے۔ جس کا مقصد عوامی خدمات اور دیگر انتظامی آمور کو بہتر انداز میں کمپیوٹرائز بنانے اور جیم سٹونز، میڈیسنل پلانٹس اور چھوٹے ہائیڈرو پاور پراجیکٹس کے قیام کو جدید سائنسی خطوط پر استوار کرنے کیلئے مارکیٹ میں دستیاب سائنس وانفارمیشن ٹیکنالوجی کی مہارت رکھنے والے نوجوانوں کی تخلیقی آ ئیڈیاز کی معاونت سے استفادہ حاصل کرنا ہے یہ باتیں انہوں نے یہاں پشاور سے جاری اپنے ایک بیان میں کہیں۔انہوں نے کہاکہ محکمہ سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی میں انوویشن فنڈز(innovation fund)متعارف کیا گیا ہے جس کے تحت آئی ٹی سیکٹر میں نئی ائیڈیازکیلئے ٹیلنٹ ہنٹ کی جائے گی۔ عاطف خان نے کہا کہ ان اقدام سے صوبائی معیشت میں استحکام سمیت روزگار کے مواقع اور ماحول دوست توانائی میں خود کفالت حاصل کرنے میں بھی مدد فراہم ملے گی اور سائنسی مہارت کو بھی عوام کے بہتر مفاد میں استعمال کیا جا سکے گا۔عاطف خان نے کہا کہ مذکورہ فیلو شپ کیدوران نوجوانوں کو 6 مہینے کے لیے ماہانہ 30 ہزار اعزازیہ بھی دیا جائے گا صوبائی وزیر نے بتایا کہ خیبر پختونخوا کی حکومت تمام صوبائی محکمہ کی نظام کو ڈیجیٹائز کرنے کے لئے اقدامات کر رہی اور سلسلے میں آئندہ مالی سال2021/22 میں محکمہ سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کے مختلف منصوبوں کیلئے تقریباً 14 ارب روپے رکھے گئے ہیں۔ واضح رہے کہ مذکورہ فیلو شپ پروگرام کے لیے اپلائی کرنے کی آخری تاریخ 31 جولائی ہے اور آئی ٹی سے متعلق نوجوان اس موقع سے فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔