خیبرپختونخوا کے وزیر بلدیات، دیہی ترقی و پارلیمانی امور اکبر ایوب خان نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت کی جانب سے پورے ضلع پشاور تک پی ڈی اے کے دائرہ کار کا پھیلاؤ اس ادارے کی حسن کاکردگی کا منہ بولتا ثبوت اور بڑھتے ہوئے عوامی اعتماد کا مظہر ہے جسے برقرار رکھنا زیادہ بڑا اعزاز اور چیلنج بھی ہے گندھارا ویلی سٹی کے نام سے نیا شہر بسانے کا ٹاسک بھی پی ڈی اے کے حوالے کر دیا گیا ہے جو حیات آباد سے پانچ چھ گنا زیادہ بڑی اور نوشہرہ شہر تک پھیلی ہوئی جدید رہائشی و معاشی بستی ہو گی حکومت کے اس خواب کو جلد از جلد شرمندہ تعبیر بنانا اب اس ادارے کے سربراہ اور منصوبہ سازوں کی تخلیقی صلاحیتوں کا اصل امتحان ہے وہ پشاور ڈویلپمنٹ اتھارٹی ہیڈکوارٹر حیات آباد میں اتھارٹی کے جائزہ اجلاس سے خطاب کر رہے تھے اتھارٹی کی ڈائریکٹر جنرل امارہ خان نے اس موقع پر پشاور کے ترقیاتی منصوبوں پر تازہ ترین احوال سے انہیں آگاہ کیا جبکہ اجلاس میں تمام شعبوں کے ڈائریکٹرز کے علاوہ سپیشل سیکرٹری بلدیات معتصم بااللہ شاہ اور متعلقہ وفاقی و صوبائی اداروں کے نمائندوں نے بھی شرکت کی اکبر ایوب خان نے پی ڈی اے کی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے تمام سکیموں کی بروقت اور معیاری تکمیل پر زور دیا انہیں بتایا گیا کہ گندھارا ویلی سٹی کی فزیبلٹی اور منصوبہ بندی کا ٹاسک کئی پیکیجز میں تقسیم کرکے مختلف کنسلٹنس کے حوالے کیا جا رہا ہے جو اگلے پانچ ماہ میں مکمل ہو جائے گا اور ان میں جدید ٹاؤن شپ کی تمام تخلیقی جھلکیاں نظر آئیں گی وزیر بلدیات نے رنگ روڈ کی تکمیل کیلئے ورسک روڈ سے ناصرباغ روڈ تک اہم شاہراہ کے پی سی ون منظوری اور حصول اراضی کا کام جلد نمٹانے کیلئے محکمہ منصوبہ بندی اور ضلعی انتظامیہ سے قریبی معاونت کی ہدایت کی اور امید ظاہر کی کہ 16 ارب روپے کے اس اہم ترین مواصلاتی منصوبے میں مزید تاخیر نہیں ہو گی ورنہ اس کی لاگت مزید بڑھنے کا خدشہ ہے جس کی موجودہ حکومت متحمل نہیں ہو گی۔