خیبر پختونخوا حکومت نے کوہاٹ ڈویژن کی پائیداروں بنیادوں پر ترقی کے لئے کوہاٹ ڈویژن ڈیویلپمنٹ پراجیکٹ کے نام سے ایک جامع ترقیاتی پیکج تیار کر لیا ہے اور توقع ہے کہ اگلے ہفتے اس پراجیکٹ کا باقاعدہ اجراء کیا جائے گا۔ پانج سالہ یہ منصوبہ 15 ارب روپے کی خطیر رقم سے مکمل کیا جائے گا جس کے تحت کوہاٹ ڈویژن کے تین اضلاع کوہاٹ، کرک اور ہنگو میں مختلف شعبوں میں ترقیاتی منصوبے شروع کئے جائیں گے۔ ان شعبوں میں صحت، تعلیم، زراعت، آبپاشی، آبنوشی، روڈز اور دیگر سماجی شعبے شامل ہیں۔

یہ بات وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان کی زیر صدارت کوہاٹ ڈویژن کے ترقیاتی منصوبوں سے متعلق اجلاس میں بتائی گئی۔
وزیر اعلی کے مشیر برائے سائنس اینڈ ٹیکنالوجی ضیااللہ بنگش، وزیر اعلی کے مشیر برائے توانائی و بجلی حمایت اللہ خان، وزیر اعلی کے معاون خصوصی برائے اوقاف ظہور شاکر اور ایم این اے شاہد خٹک کے علاوہ چیف سیکرٹری شکیل قادر، وزیر اعلی کے پرنسپل سیکرٹری شہاب علی شاہ، سیکرٹری انرجی اینڈ پاور زبیر خان، کمشنر کوہاٹ اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ اجلاس کو کوہاٹ ڈویژن ڈیویلپمنٹ پراجیکٹ کے مختلف پہلوؤں کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی۔
وزیر اعلی نے مذکورہ پراجیکٹ کو پورے کوہاٹ ڈویژن کی پائیداروں بنیادوں پر ترقی کے لئے ایک سنگ میل قرار دیتے ہوئے کہا کہ پراجیکٹ پر عملدرآمد سے علاقے کے لوگوں کی محرومیوں کا آزالہ ہوجائے گا اور علاقے میں ترقی و خوشحالی کے ایک نئے دور کا آغاز ہوجائے گا۔ انہوں حکام کو ہدایت کی کہ پراجیکٹ کے اجراء کی تیاریوں کو جلد سے جلد حتمی شکل دی جائے تاکہ اگلے ہفتے اس پراجیکٹ کا باقاعدہ اجراء کیا جاسکے۔ وزیر اعلی نے حکام کو یہ بھی ہدایت کی پراجیکٹ میں ترقیاتی اسکییمیں شامل کرنے کے عمل میں علاقے کے منتخب عوامی نمائندوں اور دیگر شراکت کی بھر پور مشاورت کو ہر لحاظ سے یقینی بنایا جائے اور ان اسکیموں کے انتخاب میں علاقے کے لوگوں کی ضروریات اور مسائل کو مد نظر رکھا جائے۔ وزیر اعلی نے حکام کو یہ بھی ہدایت کی کہ پراجیکٹ کے تحت ترقیاتی اسکیموں کی متعلقہ فورمز سے منظوری کو کم سے کم ممکنہ وقت میں یقینی بنایا جائے اور ان منصوبوں کی بروقت تکمیل کے لئے ابھی سے مناسب اقدامات اٹھائے جائیں۔