ایکسائز اینٹلجنس کی انسداد منشیات کی کاروائیاں، ایکسائز پولیس کے اینٹلجنس سکواڈ نے تین مخلتف کاروائیوں میں 23 کلو گرام چرس، 1800 گرام ہیروئین کی سمگللنگ کی کوشش ناکام بنا دی ، پنسل کے ڈبوں میں اعلی کوالٹی ہیروئن پارسل بنا کر بزریعہ جنرل پوسٹ آفس بیرون ملک (برمنگھم) سمگلنگ کی کوشش ناکام، معاون خصوصی برائے ایکسائز ٹیکسیشن و نارکوٹکس کنٹرول غزن جمال نے ایکسائز اینٹلجنس ٹیموں نے انسداد منشیات کی کامیاب کاروائیوں کی تعریف کرتے ہوئے کہا ہے کہ پختونخوا ملک کا واحد صوبہ ہے جس نے انسداد منشیات کی مد میں صوبائی سطح پر قانون سازی کی ہے اور اایکسائز پولیس سٹیشنز قائم کرکے منشیات کی سمگلنگ کا قلع قمع کرنے کا اعادہ کیا۔ ان کے مطابق ایکسائز اینٹلجس کی کاروائیاں قابل تعریف ہے۔ ڈائریکٹر نارکوٹکس عسکر خان کے مطابق پشاور صدر روڈ پر GPO آفس کے قریب مخبر کی نشاندہی پر ایک سمگلر کو پارسل سمیت قابو کیا گیا جو کہ پنسل کے ڈبوں میں اعلی کوالٹی ہیروئن پارسل بنا کر بزریعہ جنرل پوسٹ آفس بیرون ملک (برمنگھم) بھجوا رہا تھا۔ پنسلوں کے  17 ڈبوں سے اعلی کوالٹی 1800 گرام ہیروئن برآمد کی گئی جبکہ ملزم کو موقع پر گرفتار کرکے مزید تفتیش کیلئے تھانہ ایکسائز پشاور ریجن میں مقدمہ درج کر دیا گیا۔ ایکسائز ٹیکسیشن آفیسر ناکورٹکس کنٹرول مسعود الحق نے دوسری کاروائی کی تفصیل بتاتے ہوئے کہا کہ رنگ روڈ پشتخرہ چوک پر دوران ناکہ بندی مخبر شدہ گاڑی کے خفیہ خانوں سے اٹھارہ کلوگرام چرس برآمد کی گئی جبکہ ملزم کو گرفتار کرکے مقدمہ تھانہ ایکسائز پشاور ریجن میں درج کردیا گیا۔
ایکسائز اینٹلجنس بیورو چیف نوید جمال نے تیسری کاروائی کی روداد بتاتے ہوئے کہا کہ چارسدہ میں مخبر شدہ گاڑی کے خفیہ خانوں سے پانچ کلوگرام چرس برآمد کرکے دو ملزمان کو گرفتار لیا گیا جبکہ مقدمہ تھانہ ایکسائز مردان میں درج کردیا گیا ہے۔