وزیراعلی خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے معدنیات عارف احمدزئی نے کہا ہے کہ صوبے میں موجود معدنی وسائل سے بھرپور استفادہ کرنے کے لیے ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کو بہترین ماحول فراہم کرنے کی غرض سے ٹھوس اقدامات اٹھائے گئے ہیں جس میں سب سے اہم محکمہ معدنیات کے امور کو ڈیجیٹائز کرنے کی جانب پیش رفت ہے۔ تاکہ ماضی کی نسبت سرمایہ کار بروقت اور برمحل محکمہ معدنیات کی خدمات سے مستفید ہوں۔ ان خیالات کا اظہار معاون خصوصی نے چائنیز سرمایہ کار کمپنی کے اہلکار سے سول سیکرٹریٹ پشاور میں جمعرات کے روز ملاقات کے دوران کیا۔ معاون خصوصی برائے معدنیات عارف احمدزئی نے ڈائریکٹر جنرل محکمہ معدنیات حمیداللہ کی موجودگی میں چائنیز سرمایہ کار کمپنی کے متعلقہ آفیشل کو یقین دلاتے ہوئے کہا کہ محکمہ معدنیات خیبرپختونخوا اب کاغذی عمل درآمد سے ڈیجیٹل خدمات کی فراہمی کی سمت بڑھ چکی ہے جہاں فائل ورک سمیت دیگر امور کے لیے دفاتر کے چکر نہیں کاٹنا پڑتے اور زیادہ امور بہت جلد سرانجام ہو جاتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ سرمایہ کاری کرنے کے لیے صوبہ خیبرپختونخوا میں ماحول سازگار ہے، سرمایہ کار اب صوبے میں جہاں کہیں بھی چاہے سرمایہ کاری کر سکتے ہیں۔ چین کی ریاستی ملکیت کی کمپنی سچوان انجینئرنگ جیولوجیکل کمپلیکس کے متعلقہ اہلکار نے معاون خصوصی عارف احمدزئی کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ محکمہ معدنیات نے ہمیشہ سرمایہ کاروں کو ریلیف فراہم کی ہے جو قابل تعریف ہے۔ انہوں نے صوبے میں پلیزر گولڈ کے حوالے سے سرمایہ کاری کرنے میں دلچسپی ظاہر کرتے ہوئے کہا کہ ہماری کمپنی خیبرپختونخوا میں پلیزر گولڈ کے حوالے سے سرمایہ کاری میں دلچسپی رکھتی ہے۔ معاون خصوصی عارف احمدزئی نے مزید ریمارکس دیتے ہوئے کہا کہ معدنی روزگار سے وابستہ افراد کے ایشوز حل کرنا اولین ترجیح ہے اسی حوالے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے جا رہے ہیں۔