سپیکرقومی اسمبلی اسدقیصرنے کہاہے کہ ضلع صوابی میں صحت اورتعلیم کے شعبوں میں جدیداصلاحات میرا وژن اورانشاء اللہ اس مشن کوعملی جامہ پہنانے کیلئے تمام وسائل وموثرپیمانے بروئے کارلائے جارہے ہیں،ہسپتالوں کومزیدجدیدطبی سہولیات سے آراستہ کیاجائیگا۔انہوں نے کہاکہ ہسپتال انتظامیہ کیلئے گورننس بہتری اورسروس ڈیلوری میں بہتری ایک چیلنج ہے،مجھے امیدہے انتظامیہ چیلنج میں کامیاب ہوگی،ٹوپی اورلاہورہسپتالوں میں ایک ماہ کے اندرندرباقی تمام مشیرنی مکمل ہوجائیگی،ڈسٹرکٹ ہیڈکوارٹرہسپتال کومزیدفعال کرنے کیلئے بھی اقدامات اٹھائے جارہے ہیں،گجوخان میڈیکل کالج کی PC-Iاختتام کے مراحل میں ہے۔انہوں نے کہاکہ ضلع صوابی میں جدیدطرز کاوویمن اینڈچلڈرن ہسپتال تعمیرکریں گے جس کے PC-Iپرکام جاری ہے۔ان خیالات کااظہارانہوں نے باچاخان میڈیکل کمپلیکس مردان میں ویرولوجی کے شعبے،واٹرفلٹریشن،جدیدسہولیات سے آراستہ انتہائی انتہائی نگہداشت شعبہ اورآکسیجن کے سنٹرل سپلائی سمیت دیگراہم شعبوں کاافتتاح کرنے کے بعدذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پرصوبائی وزیربرائے صحت تیمورخان جھگڑابھی ان کے ہمراہ تھے۔
سپیکرقومی اسمبلی نے کہاکہ عوام کی خدمت عبادت سمجھ کر کررہاہوں،عوام کوسہولیات کی فراہمی میرے سیاست کامطمع نظرہے، عوام کوتمام سہولیات دہلیزپہنچاکردم لوں گا،ضلع صوابی ہیلتھ اوریجوکیشن کا ہب بنارہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ پانچ کروڑروپے کافنڈریزرو میں رکھیں گے جس ہسپتال کوسولرائزیشن کی ضرورت ہوگی وہ فنڈاس ہسپتال کیلئے ریلیزکیاجائیگا،صوابی یونیورسٹی کے ایڈمنسٹریشن، لیبارٹریزاور طلبہ کیلئے ہاسٹل کیلئے مزیدڈیڑھ ارب روپے رکھے گئے ہیں۔
انہوں نے کہاکہ بجلی کے مسائل مستقبل بنیادوں پرحل کرنے کیلئے ضلع صوابی،کنڈہ میں 220-KVA گرڈسٹیشن تعمیرکررہے ہیں جس کا سیکشن فوراختتامی مراحل میں ہے۔انہوں نے کہاکہ گرلزکامرس کالج اورگرلزٹیکنیکل کالج کی منظوری دیدی گئی ہے،شاہ منصور،پنج پیراورصوابی مانیرئی میں جس نے بھی اراضی دی وہاں پرگرلزکامرس کالج تعمیرکریں گے،صوابی اورٹوپی کادورویہ روڈاس بجٹ میں منظورہوگیاہے انشاء اللہ اس پربھی برق رفتاری سے کام کاآغازکردیاجائیگا۔انہوں نے کہاکہ عوام کے ساتھ جووعدے کئے گئے ہیں انہیں عملی جامہ پہنانے کیلئے کوئی دقیقہ فروگذاشت نہیں کیاجائیگا۔