خیبرپختونخوا کے سرکاری ہسپتالوں میں کو رونا کے مریضوں کیلئے تمام تر درکار طبی آلات سے آراستہ ہائی ڈیپنڈنسی اور آئی سی یو بیڈز کی تعداد کو بڑھانے کیلئے نیشنل ڈیزاسٹرمینجمنٹ اتھارٹی کے تعاون سے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات کئے جارہے ہیں ۔ اس مہینے کے آخر تک ہائی ڈیپنڈنسی بستروں کی تعداد میں 478 مزید بستروں کا اضافہ کر دیا جائے گا۔ جولائی کے آخر تک ان میں 315 اور اس سے اگلے مرحلے میں 150 مزید بستروں کا اضافہ کیا جائے گا۔اسی طرح کورونا مریضوں کیلئے آئی سی یو بیڈز کی تعداد کو بھی خاطر خواہ حد تک بڑھانے کیلئے ٹائم لائنز کے مطابق کام جاری ہے ۔
یہ بات وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان کی زیر صدارت کورونا کے مریضوں کو علاج معالجے کی سہولیات کی فراہمی کیلئے صوبے کے سرکاری ہسپتالوں کی موجودہ استعداد کار کو بڑھانے کیلئے اقدامات کا جائزہ لینے کے منعقدہ ایک اجلاس میں بتائی گئی ۔صوبائی وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑا، وزیراعلیٰ کے مشیر اجمل وزیر چیئرمین نیشنل ڈیزاسٹر مینجمنٹ اتھارٹی لیفٹنٹ جنرل محمد افضل اور نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر کے میجر جنرل آصف گورایا کے علاوہ چیف سیکرٹری خیبرپختونخو ا ڈاکٹر کاظم نیاز، متعلقہ انتظامی سیکرٹریوں اور 11 کور کے نمائندوں نے بھی اجلاس میں شرکت کی ۔ اجلاس کو کوروناکے حوالے سے صوبے کے سرکاری ہسپتالوں کی موجودہ استعداد اور اس استعداد کو بڑھانے کیلئے اقدامات پر تفصیلی بریفینگ دی گئی ۔اجلاس کو بتایا گیا کہ کہ پہلے مرحلے میں حیات آباد میڈیکل کمپلیکس میں 90 ، خیبر ٹیچنگ ہسپتال میں 50 ، مردان میڈیکل کمپلیکس میں 40 ، قاضی حسین احمد ہسپتال نوشہرہ میں 50 ، سید و گروپ آف ہسپتالز میں 50 ، باچا خان میڈیکل کمپلیکس صوابی میں 50 ، ویمن اینڈ چلڈرن ہسپتال رجٹر میں 100 اور ایوب ٹیچنگ ہسپتال ایبٹ آباد میں 48 ہائی ڈینپڈنسی بیڈز کا اضافہ کیا جائے گا۔