وزیر زراعت خیبرپختونخوا محب اللہ خان کی سربراہی میں ایک جائزہ اجلاس منعقد ہوا جس میں سیکرٹری زراعت محمد اسرار،ڈائریکٹر جنرل زراعت توسیع عابد کمال،ڈائریکٹر جنرل زرعی تحقیق عبدالرو¿ف اور دیگر افسران نے شرکت کی۔
اجلاس میں وزیر زراعت خیبر پختونخوا کو صوبے میں ٹڈی دل کی موجودگی اور اس کو کنٹرول کرنے کے حوالے سے کئے گئے اقدامات پر تفصیلی بریفنگ دی گئی۔ یاد رہے کہ ٹڈی دل کے جھنڈ بلوچستان کے اضلاع شیرا نی،موسی خیل،ژوب اور پنجاب کے ضلع لیہ سے 25 جنوری کو صوبہ خیبر پختونخوا کے جنوبی اضلاع میں داخل ہوئے تھے۔ جن کو کنٹرول کرنے کے لئے صوبائی حکومت نے 28 جنوری کو صوبے کے جنوبی اضلاع میں ایمرجنسی نافذ کی تھی جسے بعد ازاں پورے صوبے تک پھیلا دیا گیا۔
محکمہ زراعت کے اعدادوشمار کے مطابق اب تک ساڑھے 17 لاکھ ایکڑ رقبے پر ٹڈی دل کی موجودگی کیلئے سروے کیا جاچکا ہے جبکہ تقریباً پچیس ہزار ایکڑ کے رقبے پر ٹڈی دل کو کنٹرول کیا گیا ہے۔ سیکرٹری زراعت محمد اسرار نے صوبائی وزیر کو آگاہ کیا کہ بڑی تعداد میں ٹڈی دل کے جھنڈ افغانستان سے خیبر پختونخوا میں داخل ہورہے ہیں۔ جس کو کنٹرول کرنے کے لئے حکمت عملی ترتیب دیے دی گئی ہے اور متعلقہ اضلاع میں محکمہ زراعت کی ٹیمیں سروے اور کنٹرول کے حوالے سے اقدامات اٹھا رہی ہیں۔