وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ اس وقت صوبہ خیبرپختونخوا میں موجود دیگر صوبوں اور بیرون ملک سے تعلق رکھنے والے تبلیغی حضرات ہمارے بھائی اور مہمان ہیں ، ہم پشتون روایات کے عین مطابق اپنے مہمانوں کا خیال رکھیں گے ، جب تک وہ یہاں ٹھہرے ہیں اُنہیں ہر قسم کی سہولیات فراہم کی جائیں گی اور اُن کا بھر پور خیال رکھا جائے گا جس کیلئے تمام ضلعی انتظامیہ اور دیگر متعلقہ حکام کو پہلے سے ضروری احکامات دیئے گئے ہیں ۔ ان خیالات کا اظہار اُنہوں نے جمعرات کے روز تبلیغی جماعت کے تین رکنی ایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیاجس نے وزیراعلیٰ ہاﺅس پشاور میں اُن سے ملاقات کی اور موجودہ صورتحال میں تبلیغی جماعت کے لوگوں کو زیادہ سے زیادہ سہولیات کی فراہمی سے متعلق اُمور پر تبادلہ خیال کیا۔ صوبائی وزیر امجد علی خان اور وزیراعلیٰ کے مشیر برائے اطلاعات اجمل وزیر بھی اس موقع پر موجود تھے ۔ اس موقع پر بتایا گیا کہ جس وقت صوبے میں کورونا وائرس کے کیسز رپورٹ ہونا شروع ہوئے اُس وقت سے یہاں پر مقامی ، ملکی اور غیر ملکی تبلیغی حضرات کیلئے قرنطینہ ، سکریننگ اور ٹیسٹنگ کے علاوہ دیگر انتظامات پر کام شروع کیا گیا تھا۔ اس وقت قرنطینہ کی مدت پوری کرنے اور ٹیسٹنگ کروانے کے بعد بہت سارے تبلیغی حضرات کو اُن کے صوبوں اور ملکوں کو واپس بھیجوایا گیا ہے جو بحفاظت اپنے اپنے جگہوں میں پہنچ گئے ہیں۔