محکمہ ایکسائز خیبر پختونخوا کی پاکستان سائیکائٹرک سوسائٹی کے تعاون سے فرنٹ لائن آرمی اور پولیس کے اہلکاروں پر پروٹیکشن سپرے بھی کیا گیا، تفصیلات کے مطابق ملک بھر میں کرونا وائرس سے پیدا ہونے والی صورتحال اور احتیاطی تدابیر کے پیش نظر جہاں سینٹائزر کی مارکیٹ میں شدید قلت ہے اور اس وباء سے لڑنے اور اس وائرس کے پیھلاوں کی روک تھام کیلئے انٹہائی اہم جز ہے، اس سلسلےمیں اسلام زیب سیکریٹری ایکسائز خیبر پختونخوا اور سید فیاض علی شاہ ڈائریکٹر جنرل ایکسائز کے خصوصی احکامات پر اورفہد اکرام قاضی ڈائریکٹر سول ڈیفینس ڈائریکٹریٹ خیبر پختوا کے تعاون سے ہزاروں کی تعداد میں سینیٹائزر تیار کی گئی عسکر خان ڈائریکٹر ناکوٹکس کنٹرول کی نگرانی میں سید نوید جمال پراوینشل انچارج ایکسائز اینٹیلیجنس بیورو ، محکمہ ایکسائز کے افسران و اہلکاروں اور پاکستان سائیکائٹرک سوسائٹی کے رضا کاروں نے عوام الناس اور فرنٹ لائن پولیس و آرمی اہلکاروں میں یہ سینٹائزر تقسیم کئے، اور احتیاطی تدابیر سے آگاہی دی ۔ اس کے علاوہ پاکستان سائکائٹرک سوسائی کے جنرل سیکریٹری ڈاکٹرمیاں مختار الحق عظیمی کو فرنٹ لائن ہیلتھ ورکرز جن کا واسطہ ڈائریکٹ کرونا کے مریضوں سے ہے، کیلئے بھی سینائزر فراہم کیئے گئے ، محکمہ ایکسائز افسران و اہلکاروں اور پاکستان سائیکائٹرک سوسائٹی کے رضا کاروں نے نہ صرف مختلف ناکہ بندیوں پر سینٹائزرز تقسیم کیئے بلکہ ناکہ بندیوں پر موجود آرمی اور پولیس اہلکاروں پر حفاظتی پروٹیکشن سپرے بھی کیا گیا۔ ،