وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے مشیر اطلاعات و تعلقات عامہ اجمل وزیر نے اطلاعات و تعلقات عامہ کا قلمدان سنبھالنے کے بعد باضابطہ طور پر میڈیا کو ہفتہ کے روز سول سیکرٹریٹ میں بریفنگ دی۔ صحافی حضرات کا شکریہ ادا کرتے ہوئے اجمل وزیر نے کہا کہ صحافی برادری نے ہمیشہ ہماری مثبت منصوبوں کو احسن طریقے سے کوریج دی ہے اور جہاں کسی منصوبے میں کمی رہ گئی تو اس کی نشاندہی کی اوراس پرحکومتی اداروں نے بروقت کاروائی بھی کی۔ صحافی برادری جب اور جہاں چاہے رابطہ کر سکتے ہیں۔
نئی ضم شدہ اضلاع کے سات پریس کلبز کے لئے فنڈز کا اعلان کرتے ہوئے مشیر اطلاعات نے کہا کہ نئی ضم شدہ اضلاع میں پریس کلبز اور صحافیوں کو درپیش چیلنجز سے باخبر ہیں، جس سے نمٹنے کے لئے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا نے ہر پریس کلب کے لئے 20لاکھ روپے کے فنڈ ز کی منظوری دی ہے جو مجموعی طور پر ایک کروڑ 20 لاکھ روپے بنتے ہیں، ماضی میں ان اضلاع کے صحافیوں کی جانب کسی حکومت نے توجہ نہیں دی تھی۔
وزیراعلیٰ کے مشیر اجمل وزیر نے رشکئی اکنامک زون کو صوبے میں معیشت کی بہتری، بے روزگاری کے خاتمے اور غربت سے نمٹنے کے لئے ایک بہترین منصوبہ قرار دیتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ محمود خان کی سربراہی میں رشکئی اکنامک زون کے منصوبے کو پایہ تکمیل تک پہنچانے کے لئے حکومت پرعزم ہے جس کی اعلیٰ مثال وزیراعظم عمران خان کی جانب سے اس کی منظوری ہے۔ اکنامک زون سے روزگار کے نئے مواقع ملنے پر اظہار خیال کرتے ہوئے اجمل وزیر نے واضح کیا کہ رشکئی اکنامک زون سے تقریبا دو لاکھ افراد کو روزگار مل سکے گا۔ رشکئی اکنامک زون کے سلسلے میں ہونے والی سرمایہ کاری کی جانب اشارہ کرتے ہوئے مشیر اطلاعات نے کہا کہ مذکورہ منصوبے میں چار ارب روپے کی سرمایہ کاری ہوگی جبکہ مستقبل میں اس منصوبے کو خیبراکنامک کوریڈور سے منسلک کریں گے جس سے ہماری صنعت و کاروبار افغانستان اور وسطی ایشیا تک بڑھنے میں اہم پیش رفت ہوگا۔ وزیرآعظم عمران خان کا خصوصی شکریہ ادا کرتے ہوئے مشیر اطلاعات نے کہا کہ خیبرپختونخوا کی صوبائی حکومت اور عوام وزیراعظم عمران خان کے مشکور ہیں اور یہ ان کی جانب سے ہمارے لئے ایک تحفہ ہے۔ جس سے صوبے میں ترقی کا ایک نیا دور شروع ہوگا۔