صوبائی وزیر قانون و پارلیمانی امور اور انسانی حقوق سلطان محمد خان نے کہا ہے کہ قبائلی عوام کی قربانیاں پاکستان کی تاریخ میں ایک روشن باب سے ہمیشہ یاد رکھی جائے گی صوبائی وزیر نے کہا کہ وفاقی وصوبائی حکومت قبائلی اضلاع کی ترقی کیلئے اقدامات کر رہی ہے جو بہت جلد ترقی یافتہ قبائلی اضلاع کی صورت میں رونما ہو جائیگی۔ انھوں نے کہا کہ خیبرپختونخوا میں قبائلی اضلاع کو ضم کرکے ایف سی آر جیسے کالے قانون کا خاتمہ کیا گیا ہے جو قبائلی اضلاع میں ترقی کی سفر کا ضامن ثابت ہوگا۔ان خیالات کا اظہار وزیر قانون نے ضلع مہمند کے ایک روزہ دورے کے موقع پر ضلع میں ترقیاتی سکیموں کے حوالےسے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔تقریب میں رکن قومی اسمبلی ساجد مہمند،رکن صوبائی اسمبلی خالد خان مہمند،ضلعی انتظامیہ کے افسران اور قبائلی مشر ان نے کثیر تعداد میں شرکت کی۔اس موقع پر ڈپٹی کمشنر مہمند نے وزیر قانون کو تمام جاری ترقیاتی سکیموں کے حوالےسے تفصیلی بریفننگ دی۔وزیر قانون نے متعلقہ حکام کو ھدایات دیتے ہوئے کہا کہ تمام سکیموں میں شفافیت کو یقینی بنائے اور اسے بروقت مکمل کیا جائے۔منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے سلطان محمد خان نے کہا کہ قبائلی مشران کی مشاورت سے تمام ترقیاتی سکیم چاہے تعلیم سے متعلق ہو،صحت سے یا دیگر ترقیاتی منصوبے ہو، بہت جلد مکمل کیے جائینگے اور ضلع مہمند کے جتنے بھی مسائل ہیں صوبائی حکومت انشاء اللہ ترجیحی بنیادوں پر فوری حل کرے گی۔