وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے سنٹرل پولیس آفس پشاور میں ای روزنامچہ ، ای۔ ایف آئی آر اور ہیومین ریسورس مینجمنٹ سسٹم کی ڈیجیٹائزیشن کا باضابطہ افتتاح کیا ہے اور کہا ہے کہ یہ ڈیجیٹل پاکستان کی طرف صوبائی حکومت کا ایک اور عملی قدم ہے ۔ ای ۔روزنامچہ اور ای ۔ ایف آئی آر کا اجراءعوامی سہولت کو مدنظر رکھ کر کیا گیا ہے جس کے تحت عوام کو آن لائن پورٹل ، واٹس ایپ اور ای میل کے ذریعے ایف آئی آرز اور روزنامچوں کے اندراج کی سہولت دی گئی ہے جبکہ پرنٹ شدہ کاپی کی فراہمی کا آپشن بھی موجودہے ،عوام ان چاروں آپشنزسے استفادہ کر سکتے ہیںاور گھر بیٹھے ای۔ روزنامچہ ، ای۔ ایف آئی آر اور دیگر پولیس خدمات حاصل کرسکتے ہیں۔وزیراعلیٰ نے خیبر پختونخو اپولیس کی مجموعی کارکردگی پر اطمینان کا اظہار کیا اور اُمید ظاہر کی کہ پولیس فورس جدت کی طرف مزید پیشرفت جاری رکھے گی ۔ اُنہوںنے خصوصی طور پر محکمہ پولیس کو ضم شدہ اضلاع میںپولیس فورس کو مضبوط بنانے کی ہدایت کی اور یقین دلایا کہ صوبائی حکومت اس مقصد کیلئے بھر پور تعاون فراہم کرے گی ۔خیبرپختونخوا پولیس کی کارکردگی کا پورا پاکستان معترف ہے جو ہمارے لئے فخر کا باعث ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوںنے سنٹرل پولیس آفس پشاورکے دورہ کے دوران اجلاس سے خطاب اور میڈیا سے گفتگوکرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبرپختونخوا ڈاکٹر ثناءاﷲ عباسی، وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری شہاب علی شاہ اور پولیس کے دیگر اعلیٰ حکام بھی موجود تھے ۔ وزیراعلیٰ کو صوبے میں امن و امان کی مجموعی صورتحال ، پولیس کے حوالے سے صوبائی حکومت کے اقدامات و پیشرفت اور ترقیاتی منصوبوں پر تفصیلی بریفینگ دی گئی ۔ اجلا س کو محکمہ پولیس میں ہیومین ریسورس کے مختلف ذیلی فورسز ، خیبرپختونخوا پولیس کو درپیش چیلنجز ، نئے ضم شدہ قبائلی اضلاع میں پولیسنگ ، سی پیک سکیورٹی اور دیگر اُمور کے حوالے سے بھی آگاہ کیا گیا ۔ اجلا س کو محکمہ پولیس نے صوبے میں جرائم ، بھتہ خوری ، غیر قانونی اسلحہ کی برآمدگی، ایف اے ٹی ایف کے حوالے سے کاروائی، منشیات کی روک تھام اور پولیس کی کارکردگی میں بہتری پر بھی بریفینگ دی گئی ۔