ایکسائز عوامی ادارہ ہے، کسٹمرز کو زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کی جائیں، ای پیمنٹس کی جانب جارہے ہیں، جلد سمارٹ کارڈ متعارف کرائینگے، کے پی وہیکل نمبرز کی ساکھ بحال کرینگے، جی آئی ایس بیسڈ سروے پشاور میں شروع کیا گیا ہے ان خیالات کا اظہار وزیراعلی کے معاون خصوصی برائے ایکسائز ٹیکسیشن اینڈ نارکوٹکس کنٹرول غزن جمال نے اپنے دورہ ایکسائز ڈائریکٹوریٹ کے موقع پر کیا۔ ڈائریکٹر جنرل سید فیاض علی شاہ نے معاون خصوصی کو ایکسائز ڈیپارٹمنٹ میں جاری ریفارمز سے متعلق بریفنگ دی اور ڈیپارٹمنٹ کے مختلف حصوں کادورہ کروایا۔ اس دوران معاون خصوصی نے دفتر میں آئے عوام کے مسائل بھی سنیں اور انہیں فوری حل کرنے کی ہدایت بھی جاری کیں۔ ٹیکس فیسیلیٹیشن سنٹر کے دورے کے موقع پر معاون خصوصی نے عوامی سہولیات کا جائزہ لیا اور رجسٹریشن کے عمل کو سہل اور عام فہم بنانے پر ڈیپارٹمنٹ کی تعریف کی۔ وزیراعلٰی کے معاون خصوصی کا مزید کہنا تھا کہ ایکسائز بہتر کارکردگی دکھا رہا ہے اور ایکسائز پولیس تھانوں کا قیام منشیات سے پاک معاشرے کی جانب احسن اقدام ہے ۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ ایکسائز عوامی ادارہ ہے، عوام کو زیادہ سے زیادہ سہولیات فراہم کی جائیں اور ٹیکسوں کی پیمنٹ اور دیگر عوامل کو آٹو میٹ کرکے حکومت وقت کی ای گورننس کی پالیسی کو یقینی بنائیں۔ انہوں ہدایات جاری کیں کہ نارکوٹکس سے نمٹنے کیلئے اپنی فورس قائم کرنے پر کام تیز کیا جائے ۔ ضم شدہ اضلاع میں دفاتر کا قیام پر ایکسائز انتظامیہ کی تعریف کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عوام کو ان کی دہلیز پر سہولیات فراہم کرنا عوامی فلاح و بہبود کی جانب احسن اقدام ہے۔ انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ اپنے صوبے کے وہیکل نمبرز کی ساکھ کی بحالی کیلئے میگا کمپین ترتیب دیں اور مروجہ پالیسے سے ہٹ کر عوام کو راغب کرنے کیلئے انقلابی اقدامات اٹھائیں تاکہ ہماری عوام اپنے ہی صوبے میں گاڑیاں رجسٹر کریں۔ انہوں نے صوبائی وئیر ہاوس کا دورہ کیا اور زیرتعمیر ایکسائز پولیس سٹیشن پر جاری تعمیراتی کام کا جائزہ لیا۔