تفصیلات کے مطابق عسکر خان ڈائریکٹر نارکوٹکس کنٹرول کو خفیہ زرائع سے اطلاع ملی کہ ہونڈا موٹر کار میں منشیات براستہ موٹروے سمگلنگ کی کوشش کی جارہی ہے ، اطلاع کو مصدقہ جانتے ہوئے کاروائی کیلئے خالد خان اسسٹنٹ ایکسائز اینڈ نارکوٹکس کنٹرول آفیسر کے زیر نگرانی موبائل سکواڈ کے انچارج انسپکٹر ناصر محمود خان ، ایڈیشنل انچارج حمزہ خان شاروم اور دیگر نفری پر مشتمل ایک ٹیم تشکیل دی ، مزکورہ ٹیم نے موٹر وے انٹر چینج پشاور کو جانے والے رنگ روڈ پر دوران ناکہ بندی اطلاع کے مطابق ہونڈا سٹی گاڑی نمبری .. کو تیز رفتاری سے آتا دیکھ کر رکھنے کا اشارہ کیا ، گاڑی ڈرائیور نے رکھنے کے بجائے گاڑی کی اسپیڈ مزید بڑھا دی اور بھاگنے کی کوشش کی ، تعاقب کرنے پر ڈائیور گاڑی موٹروے روڈ گل پل پر روڈ سائیڈ چھوڑ کے موٹروے کے سائیڈ روڈ پر فرار ہونے میں کامیاب ہوگیا ، مزکوری گاڑی کی تلاشی لینے پر گاڑی کے دائیں سائیڈ دروازے سے 6000 گرام افیون برآمد ہوئی ، ملزم کی تلاش جاری ، مزید تفتیش کیلئے ایکسائز خیبر پختونخوا انسداد منشیات قانون 2019 کی دفعہ 9  کے تحت تھانہ چمکنی میں مقدمہ درج کردیا گیا۔ ،