سینئر وزیر برائے ارکیالوجی و سیاحت عاطف خان کے ساتھ تھائی لینڈ سے تعلق رکھنے والے بدھ مت راہبوں کی 9 رکنی وفد نے گزشتہ روز اسلام اباد میں  ملاقات کی۔ملاقات میں خیبر پختون خوا میں بدھ مت کے مقدس مقامات کے بارے میں تبادلہ خیال ہوا۔اس موقع پر سیکرٹری ارکیالوجی کامران رحمان اور ڈائریکٹر ارکیالوجی ڈاکٹر عبدالصمد سمیت ورلڈ بنک کے نمائیندے بھی موجود تھے۔بدھ مت راہبوں کا وفد صوبے میں موجود بدھ مت کے مقدس مقامات کا دورہ کریں گے اور وہاں پر اپنے مذہبی رسومات ادا کریں گے۔سینئر وزیر عاطف خان نے وفد کو صوبے میں موجود بدھ مت کے مقدس مقامات کے بارے میں آگاہ کرتے ہوئے کہا کہ خیبر پختوخوا میں بدھ مت کے 2000 مقدس مقامات موجود ہیں۔حکومت نے ان مقامات کو محفوظ بنانے اور ترقی دینے کے لئے ایک ارب روپے مختص کئے ہیں۔سینئر وزیر نے کہا کہ دنیا کے مختلف ممالک سے بدھ مت کے راہبوں کا خیبر پختون ں خوا کے دورے  کرنے اور مذہبی رسومات ادا کرنا خوش آئند بات ہے۔ صوبے میں موجود بدھ کے مقدس مقامات کے ذریعے دنیا کو پیغام دینگے کہ پاکستان دوسرے مذاہب کا احترام کرتے ہیں اور مزہبی ہم اہنگی کو فروغ دیتا ہے۔بدھ مت راہبوں کا وفد کل مردان کے علاقے تخت بھائی میں موجود بدھ مت کے مقدس مقامات کا دورہ کرکے مذہبی رسومات ادا کریں گے۔وفد آج  پشاور میوزیم کا دورہ بھی کریں گے۔