خیبر میڈیکل کالج کے سالانہ کانووکیشن میں سال 2018-19کے 239 طلباء وطالبات میں ڈگریاں تقسیم

خیبر میڈیکل کالج کا، کانووکیشن 30 نومبر 2022 بروز بدھ کو یونیورسٹی آف پشاور کے کانووکیشن ہال میں منعقد ہوا جس کے دوران ایم بی بی ایس کے 239 طلباء وطالبات کو ڈگریاں دی گئیں، مختلف شعبوں /مضامین میں 20 کے قریب گریجویٹس کو گولڈ میڈل سے نوازا گیا۔ سیشن 2019 سے ڈاکٹر ابوذر سراج نے 10 گولڈ میڈل حاصل کیے اور سیشن 2018 سے ڈاکٹر کوثر سمیع نے 9 گولڈ میڈل اپنے نام کئے۔اس موقع پر خیبر پختونخوا کے وزیر صحت و خزانہ تیمور خان جھگڑا نے بطور مہمان خصوصی شرکت کی۔ ڈین خیبر میڈیکل کالج پشاور، پروفیسر ڈاکٹر محمود اورنگزیب نے معزز مہمانوں کا تہہ دل سے استقبال کیا جس میں مہمان خصوصی جناب تیمور خان جھگڑا، سینیٹر ڈاکٹر ثانیہ نشتر، وائس چانسلر خیبر میڈیکل یونیورسٹی پروفیسر ڈاکٹر ضیا ء الحق، چیئرمین بورڈ آف گورنرز کے ٹی ایچ، کے ایم سی، کے سی ڈی پروفیسر ڈاکٹر ندیم خاور، رجسٹرار کے ایم یو ڈاکٹر سلیم گنڈا پور، خیبر میڈیکل کالج کے معزز فیکلٹی ممبران، ڈین خیبر کالج آف ڈینٹسٹری پروفیسر ڈاکٹر سید ناصر شاہ، ہسپتال ڈائریکٹر ڈاکٹرمحمد ظفر آفریدی، میڈیکل ڈائریکٹر ڈاکٹر محمد سراج،کے ٹی ایچ، کے ایم سی کی انتظامیہ، نوجوان گریجویٹس اور ان کے خاندان کے افراد شامل تھے۔ ڈین خیبر میڈیکل کالج پروفیسر ڈاکٹر محمود اورنگزیب نے طلباء اور ان کے والدین کو ان کی شاندار کامیابی پر مبارکباد پیش کرتے ہوئے کہا کہ 68 سال پر محیط شاندار تاریخ کے ساتھ خیبر میڈیکل کالج نے روایتی طور پر آنے والی نسل کے بہترین اور ذہین ڈاکٹروں کو پورے خطے میں عوام کے خدمات کے لئے پیش کئے۔ صوبائی وزیر صحت وحزانہ تیمور خان جھگڑا نے گریجویٹ ہونے والے طلباء سے اپنے تقریرمیں کہا کہ 3 اصول ہیں جو آپ کو اپنے مطلوبہ اہداف حاصل کرنے میں مدد فراہم کریں گے 1- مشکل وقت کا سامنا کریں اور ان سے نمٹیں یہ آپ کو طویل مدتی کامیابی کے لیے مدد فراہم کرے گا۔ 2- جو لوگ نا امید ہیں ا ن کو میرا مشورہ ہے کہ زندگی میں کبھی ہمت نہ ہاریں۔ 3- اپنی اقدار، اخلاقیات اور اصولوں پر سمجھوتہ نہ کریں۔ مزید برآں، انھوں نے کہا کہ کے ایم سی پاکستان کے ٹاپ میڈیکل کالجوں میں شمار ہوتا ہے اور آج میں طلباء کو چیلنج دیتا ہوں کہ وہ اس کو ٹاپ موسٹ پر پہنچائیں۔ خیبر میڈیکل یونیورسٹی کے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر ضیاء الحق نے کہا کہ ہم نے کے ایم سی میں مستقبل کے ہیلتھ کیئر لیڈروں کو تیار کیا ہے۔ اس کے علاوہ، انھوں نے طلباء کی حوصلہ افزائی کی کہ وہ اپنے جذبے کی پیروی کریں اور وہ کریں جو وہ پسند کرتے ہیں اور عظیم کام کرنے کا واحد طریقہ یہ ہے کہ آپ جو کرتے ہیں اس سے محبت کریں۔ خیبر میڈیکل کالج کے سابقہ طالب علم سینیٹر ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے طلباء وطالبات کو اس شاندار کامیابی پر مبارکباد دی اور کہا کہ مجھے فخر ہے کہ ڈین کے ایم سی نے مجھے اتنی عزت دی اور مجھے مدعو کیا اور میں بھی 1980 کی دہائی میں اس باوقار ادارے کا حصہ تھی۔ مجھے خوشی ہے کہ ہماری نئی نوجوان نسل خیبر میڈیکل کالج کو سرفہرست بنانے کے لئے کوشاں ہے۔ تقریب کا اختتام ایک قابل فخر لمحے کے ساتھ ہوا جہاں ہمارے معزز مہمانوں اورخیبر میڈیکل کالج کے سابقہ طلباء چیئرمین بورڈ آ ف گورنر پروفیسر ڈاکٹر ندیم خاور، ممبر بورڈ آف گورنر پروفیسر ڈاکٹر ظفر دُرانی، اور سابق پرنسپل خیبر میڈیکل کالج پروفیسر ڈاکٹر اعجاز حسین میں لائف ٹائم اچیومنٹ ایوارڈز تقسیم کیے گئے۔
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔