خیبر پختونخوا کے وزیر زکوٰۃ وعشر سماجی بہبود خصوصی تعلیم اور ترقی خواتین انورزیب خان نے نشے کے عادی افراد کے علاج معالجے کیلیے قائم بحالی مراکز, سوشل ویلفیئر ریہیبلیٹیشن اینڈ ڈرگ ایڈکٹ سنٹر ، دا حق آوازٹریٹمنٹ سنٹر اور کئیر ویلفیئرآرگنائزیشن ہسپتال پشاور کا الگ الگ دورہ کیا صوبائی وزیر نے بحالی مراکز اور ہسپتال میں زیر علاج مریضوں کی عیادت کی مریضوں کو دی جانے والی سہولیات کے بارے میں دریافت کیا اور دیگر انتظامات کا جائزہ لیا جبکہ ڈرگ ریہیبلیٹیشن سنٹرز میں قائم میڈیکل سٹورز کا بھی دورہ کیا اس موقع پر صوبائی وزیر کو مذکورہ مراکز اور ہسپتال کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی بریفنگ کے دوران بتایا گیا کہ اس وقت کئیر ہسپتال میں مختلف علاقوں سے 100, سوشل ویلفئیر ڈرگ ایڈکٹ سنٹر میں 210 اور دا حق آواز ٹریٹمنٹ سنٹر میں 157 مریضوں کا علاج ہورہا ہے ان مریضوں کی حالت اب پہلے سے بہت بہتر ہیں اور بہت جلد نشے کے ناسور سے نجات پائیں گے معاشرے کے زمہ دار شہری بن جائینگےصوبائی وزیر نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ بحالی مراکزمیں علاج کیلیے داخل ہونے والے نشے کے عادی افراد کو سہولیات کی فراہمی میں کوئی کمی نہیں آنی چاہیے بلکہ ان افراد کی باقاعدہ اور صحیح طرح سے خیال رکھا جائیں تاکہ جلد نشے کی لعنت سے چٹھکارا حاصل کرکے دوبارہ معاشرے کےاچھے اور زمہ دار انسان بن سکے صوبائی وزیر انورزیب خان اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ منشیات کی روک تھام کیلیے حکومت تمام تر اقدامات اٹھارہی ہے لیکن حکومت کے ساتھ ساتھ یہ ہر شہری کا فرض بنتا ہے کہ وہ اس اہم فریضے میں اپنا کردار ادا کرے کیونکہ منشیات اور دوسرے نشہ آور چیزوں کو معاشرے میں جڑ سے اکھاڑنے کیلیے ضروری ہے کہ عوام بھی منشیات کی روک تھام کے حوالے سے آگاہی مہم میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے آئس اور دوسرے منشیات کے لعنت میں مبتلا افراد کو اس لعنت سے باہر نکلنے اور انہیں مرکزی دھارے میں واپس لانا ہم سب کی سماجی ذمہ داری بنتی ہے انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے نشے کے عادی افراد کی علاج معاجے کیلیے مختلف بحالی مراکز کو فنڈز جاری کئے ہیں جہاں پر ان لوگوں کا باقاعدہ علاج جاری ہے اس وقت پشاور میں مجموعی طور پر 1200 نشے کے عادی افراد کو مختلف جگہوں سے اٹھائے گئے ہیں اور مختلف بحالی مراکز میں زیر علاج ہیں صوبائی وزیر نے اس ضمن میں کمشنر پشاورڈویژن ریاض خان محسود اور محکمہ سماجی بہبود کی کارکردگی کوبھی سراہا قبل ازیں صوبائی وزیر انورزیب نے بحالی مراکز کے کیچن کا بھی دورہ کیا اور مریضوں کو دیا جانے والا کھانے پینے کی اشیاء کا جائزہ لیا اور لگایا ہوا روز مرہ کھانے کا فہرست بھی چیک کیا۔