میڈیکل ٹیچنگ انسٹی ٹیوٹ حیات آباد میڈیکل کمپلیکس پشاور میں پیشنٹس فیسیلیٹیشن سنٹر کا افتتاح تیمور خان جھگڑا، وزیر صحت و خزانہ نے کیا۔ یہ سنٹر مریضوں کو ایک ہی چھت تلے صحت سہولت کی رجسٹریشن اور داخلے کے عمل سمیت سہولیات فراہم کرے گا۔ ہسپتال میں صحت سہولت کارڈ کے مریضوں کوسہولت فراہم کرنے کے لیے یہ مرکز نیشنل ڈیٹا بیس اینڈ رجسٹریشن اتھارٹی (نادرا) کے ساتھ ہسپتال مینجمنٹ انفارمیشن سسٹم کے ذریعے ڈیجیٹل طور پر منسلک ہے۔
وزیر صحت اور خزانہ نے کہا کہ اب مریضوں کو ایچ ایم سی میں زیادہ بہتر سہولت فراہم کی جائے گی خصوصا وہ مریض جو صحت کارڈ کے زریعے علاج کرواتے ہیں۔ ہسپتالوں میں جو تبدیلی اب ہر کوئی دیکھ سکتا ہے وہ صحت کے شعبے میں کی جانے والی اصلاحات کا نتیجہ ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ صوبائی حکومت صرف عمارتیں تعمیر نہیں کر رہی بلکہ صحت کے پورے نظام کو بہتر بنانے میں مصروف عمل ہے۔
میڈیکل ڈائریکٹر ایچ ایم سی پروفیسر ڈاکٹر شہزاد اکبر نے کہا کہ یہ پیشنٹ فیسیلیٹیشن سنٹر ہسپتال میں داخلے کے عمل کو مزید موثر اور منظم بنائے گا۔ مریض ایک ہی چھت کے نیچے داخلے کے تمام مراحل سے گزر سکیں گے کیونکہ اس مرکز میں اسٹیٹ لائف انشورنس کاؤنٹر، بیڈ منیجر اور ہسپتال کے صحت سہولت پروگرام کا عملہ ایک جگہ پر موجود ہے تاکہ مریض کو غیر ضروری نقل و حرکت سے بچایا جا سکے۔ انہوں نے مزید کہا کہ ہسپتال کی اسٹریٹجک سمت کے حصے کے طور پر اس کی ڈومین میں نئی ذیلی خصوصیات شامل کی جا رہی ہیں۔ وزیر صحت نے اس سلسلے میں پلمونولوجی اور نیورولوجی سروسز کا باقاعدہ افتتاح بھی کیا۔
ہسپتال کے ڈائریکٹر ڈاکٹر شہزاد فیصل نے کہا کہ ہسپتال میں سہولت کی اصلاح اور کچھ نئی ذیلی خصوصیات کا اضافہ خیبر پختونخوا کے عوام کو صحت کی بہترین خدمات فراہم کرنے میں معاون ثابت ہو گا۔
بعد ازاں وزیر صحت اور خزانہ نے ریڈیولاجی ڈیپارٹمنٹ میں حال ہی میں نصب آلات کا بھی افتتاح کیا جس میں 128 سلائس سی ٹی سکین، میموگرام، ڈی ای ایکس اے اور فلوروسکوپی مشینیں شامل ہیں۔ انہوں نے گائنی، پیڈیاٹرکس، میکسیلو فیشل اور ڈرمیٹولوجی کی خصوصیات کے ساتھ ساتھ نئے سرے سے تیار کردہ سائیکاٹری یونٹ کا احاطہ کرنے والے نئے او پی ڈی بلاک کا بھی دورہ کیا۔