صوبائی وزیر تغلیم شہرام خان تراکئی نے کہا ہے کہ سمارٹ سکول بروگرام صوبے کے دو اضلاع میں شروع کررہے ہیں جس کیلیے پائیلٹ کے تحت 15 سکولوں کا انتخاب ہوچکا ہے ان منتخب تمام سکولوں میں نظام تعلیم ڈیجیٹلائزڈ ہوگا طلباء کی حاضری، جائزہ امتحانات، لیکچرز ، لائبریری اور لیبارٹری بشمول پورا نظام آئی ٹی بیسڈ ہوگا اور سنگل نیشنل کریکولم کے مطابق پورے کورس کے ڈیجیٹل لیکچرزتیار کئے جائینگے اور اساتذہ کو تربیت بھی دی جائےگی انہوں نے کہا کہ یہ ایک انقلابی منصوبہ ہے جس کے پائلیٹ کے بعد پورے صوبے کے تمام سکولوں تک توسیع دی جائیگی۔ کورونا اور اس جیسی وباء کے دوران تعلیمی سرگرمیاں متاثر ہونے میں یہ پروگرام بہت مددگار ثابت ہوگا۔ ان خیالات کا اظہار صوبائی وزیر تعلیم شہرام خان ترکئی نے محکمہ تعلیم اور Hope-87کے مابین مفاہمتی یاداشت پر دستخط کے حوالے سے منعقدہ پر گرام کے موقع پر کیا

شہرام خان ترکئی نے کہا ہے کہ آئی ٹی دور جدید کی اہم ضرورت ہے اور ان جیسی پروگراموں کے زریعے بچوں کو مستقبل کیلیے تیار کررہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ منتخب سکولوں میں میل اور فیمیل سکولوں کو یکساں نمائندگی دی گئی ہے تاکہ خواتین بھی آئی ٹی کی سکلز اور تعلیم حاصل کرسکیں۔

وزیر تعلیم نے کہا کہ سکولوں سے باہر بچوں کو سکولوں میں لانے اور موجود بچوں کو مقابلے کے امتحانات کی تیاری میں یہ منصوبہ اہم سنگ میل ہے طلباء اور اساتذہ کی آن لائن جائیزے کی بدولت کوالٹی ایجوکیشن میں بہتری آئیگی اور طلباء کی مختلف کورس و مضامین میں کمزوری دور کرنے کیلیے اقدامات کئے جائینگے جبکہ کورس کی تمام لیکچرز کی آن لائن دستیابی کی بدولت کسی بھی بر وقت لیکچرز سے طلباء تیاری کرسکیں گے۔

شہرام خان ترکئی نے محمکہ تعلیم حکام کو ہدایت کی کہ لیکچرز کیلیے اساتذہ کی دستیابی اور دیگر تمام انتظامات فوراً مکمل کریں اور منتخب سکولوں کے تمام ڈیٹا کو ای ایم آئی ایس کے ساتھ منسلک کیا جائے۔ وزیر تعلیم نے کہا کہ نئے شروع ہونے والے منصوبے ٹبلیٹ ان سکولوں کو بھی اس منصوبے کے ساتھ منسلک کردیا جائےگا جس کے ذریعے کلاس رومز اور درس وتدریس کے ساتھ سکولوں کی دوسری سہولیات بھی مین سرور پر دستیاب ہوگی۔