خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اینڈ حلال فوڈ اتھارٹی کی جانب سے صوبے بھر میں ملاوٹ مافیا کے خلاف آپریشن کا سلسلہ جاری ہے۔ ڈائریکٹر جنرل فوڈ سیفٹی سہیل خان کی ہدایت پر صوبے کے مختلف اضلاع میں اشیاء خوردنوش میں ملاوٹ کرنے والوں کے خلاف کاروائیوں میں تیزی لادی گئی ہے۔ خیبرپختونخوا فوڈ اتھارٹی کے مطابق مردان میں فوڈ سیفٹی کے ٹیم نے کولڈ سٹوریج کا معائنہ کرتے ہوئے ہزاروں کی تعداد میں گندے انڈے برآمد کئے، مضر صحت انڈے مختلف بیکریز کو فراہم کئے جاتے تھے۔ فوڈ سیفٹی ٹیم نے کاروائی کے دوران کولڈ سٹوریج سے غیر معیاری گوشت بھی برآمد کیا، جس کے بعد کولڈ سٹوریج کو سیل کردیا گیا، مضر صحت خوراکی اشیاء رکھنے پر مالکان کے خلاف قانون کے مطابق کاروائی کی جائیگی۔ خیبرپختونخوا فوڈ سیفٹی اتھارٹی کے مطابق پرائم منسٹر سیٹزن پورٹل پر موصول ہونے والی شکایات پر مردان میں فوڈ سیفٹی ٹیم نے فلور مل کا بھی معائنہ کرتے ہوئے حفظان صحت کے اصولوں کی خلاف ورزی پر جرمانہ عائد کیا، جبکہ لیب ٹسٹ کے لئے نمونے لے لئے گئے۔ خیبرپختونخوا فوڈ اتھارٹی کے مطابق ڈیرہ اسماعیل خان میں بھی محکمہ لائیو سٹاک کے تعاون سے ملاوٹ مافیا کے خلاف کاروائی کی گئی، اور پنجاب سے آنے والے دودھ ٹینکرز کی چیکنگ کی گئی۔ کاروائی میں 8 ہزار لیٹرز سے زائد مضر صحت دودھ کو ضائع کیا گیا۔ ڈی جی فوڈ اتھارٹی سہیل خان کا کہنا تھا کہ چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا کی ہدایت پر صوبے میں ملاوٹ مافیا کے خلاف کاروائیوں کا یہ سلسلہ آگے بھی جاری رہیگا۔ ان کا کہنا تھا کہ فوڈ اتھارٹی کی اولین ترجیح صحت عامہ کا تحفظ یقینی بنانا ہے، جس کے لئے صوبے بھر میں فوڈ اتھارٹی کی ٹیمز متحرک ہیں۔ ڈائریکٹر آپریشنز عظمت اللہ وزیر کا کہنا تھا کہ صوبے میں معیاری خوراک کی فراہمی ممکن بنانے کے لئے اتھارٹی آپریشنز کے ساتھ ساتھ اگاہی پر بھی بھرپور توجہ دے رہی ہے اور تعلیمی اداروں سمیت صوبے کے مختلف مقامات پر اگاہی سیشنز کا انعقاد کیا جارہا ہے۔