وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے محکمہ آبپاشی کے حکام کو ہدایت کی ہے کہ محکمے کے تحت ترقیاتی کاموں کے ٹھیکوں میں شفافیت کو ہر لحاظ سے یقینی بنانے کیلئے ای ورک آرڈر اور ای بلنگ کا نظام رائج کیا جائے جبکہ ڈیموں کی تعمیر سمیت محکمے کے تحت جاری ترقیاتی منصوبوں کی بروقت تکمیل کیلئے ٹھوس اقدامات اُٹھائے جائیں ۔ اُنہوں نے حکام کو یہ بھی ہدایت کی کہ محکمے کے زیر انتظام آبپاشی کی نہروں پر غیر قانونی تجاوزات کو مستقل بنیادوں پر ہٹانے کے علاوہ ان نہروں کو ہر قسم کی آلودگی سے پاک کرنے کیلئے بھی مناسب اقدامات اُٹھائے جائیں ۔وہ منگل کے روزاپنے دفتر میں محکمہ آبپاشی کی کارکردگی کا جائزہ لینے کیلئے منعقدہ ایک اجلاس کی صدارت کر رہے تھے ۔ اجلاس کو محکمے کے تحت جاری ترقیاتی منصوبوں پر اب تک کی پیشرفت ، محکمے کی مجموعی کارکردگی ، اصلاحاتی اقدامات اور دیگر اُمور کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی ۔ وزیراعلیٰ کے پرنسپل سیکرٹری شہاب علی شاہ، سیکرٹری آبپاشی طاہر اورکزئی ، چیف انجینئر ایریگیشن صاحبزادہ سعید او ردیگر متعلقہ حکام نے بھی اجلاس میں شرکت کی ۔
اجلاس کو محکمے کے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں شامل منصوبوں کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ مجموعی طور پر محکمہ کے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں 243 چھوٹے بڑے منصوبے شامل ہیں جن کیلئے 15806 ملین روپے مختص ہیں ، ضم شدہ اضلاع کے سالانہ ترقیاتی پروگرام میں 70 منصوبے شامل ہیں جن کیلئے 2031 ملین روپے مختص کئے گئے ہیں ۔ اسی طرح ضم شدہ اضلاع کے تیز رفتار ترقیاتی پروگرام کے تحت 4731 ملین روپے مالیت کے 16 منصوبوں پر کام جاری ہے ۔ مزید بتایا گیا کہ شعبہ آبپاشی میں پی ایس ڈی پی کے تحت 12 منصوبوں پر کام جاری ہے جن کیلئے 4657.187 ملین روپے مختص کئے گئے ہیں۔ مذکورہ منصوبوں میں سے 59 منصوبے تکمیل کے مراحل میں ہیں۔ اجلاس کو شعبہ آبپاشی میں فلیگ شپ منصوبوں کے حوالے سے بریفنگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ جبہ ڈیم ضلع خیبر کی تعمیر کیلئے رواں سالانہ ترقیاتی پروگرام میں ایک ہزار ملین روپے مختص کئے گئے ہیں ۔ اسی طرح 5156.331 ملین روپے کے منظور شدہ تخمینہ لاگت سے باران ڈیم بنوں کی ریزنگ کے منصوبے پرپیشرفت جاری ہے ۔