صوبائی وزیر بلدیات، الیکشنز و دیہی ترقی اکبر ایوب خان نے ٹاؤن ٹو انتظامیہ کو ہدایت کی ہے کہ سینیٹشن سٹاف کی بھرتی کا عمل فوراً شروع کروایا جائے جبکہ شہر کیلئے جدید مشینری بھی فوراً خریدی جائے۔انھوں نے کہا کہ شہر کی صفائی کیلئے کچرا اور گند روزانہ کی بنیاد پر اٹھایا جائے اور اس مقصد کیلئے ڈبلیو ایس ایس پی کے طرز پر اپنے بجٹ سے مشینری خریدی جائے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ٹاؤن ٹو دفتر کے دورے کے موقع پرکیا۔ممبران صوبائی اسمبلی آصف خان، ارباب وسیم حیات سیکرٹری لوکل کونسل بورڈ خضر حیات اور دیگر اہلکار بھی اس موقع پر موجود تھے ۔ اکبر ایوب خان نے کہا کہ شہر میں وال چاکنگ پر مکمل پابندی ہوگی اور جس نے خلاف ورزی کی ان پر جرمانہ عائد کر دیا جائے ۔انھوں نے حکام کو ہدایت کی کہ پشاور سلاٹر ہاؤس کو صوبے کا سب سے جدید اور خوبصورت سلاٹر ہاؤس بنایا جائے اور مقامی ممبران صوبائی اسمبلی کے ساتھ ملکر صفائی کیلئے لائحہ عمل تیار کیا جائے۔ صوبائی وزیر بلدیات نے ٹاؤن ٹو میں قائم ون ونڈو آپریشن فیسلیٹشن سنڑ کا دورہ بھی کیا اور عوام کو دی جانے والی سہولیات کے بارے میں آگاہی حاصل کی۔ بریفنگ میں صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ اس سنٹر میں عوام کو گھریلوں اور کمرشل نقشہ جات کی معلومات اور دستیابی کے علاوہ ان کے کئی دوسرے اہم مسائل ترجیحی بنیادوں پر ایک ہی چھت کے نیچے حل کئے جاتے ہیں ۔