وزیراعلی کے معاون خصوصی برائے اقلیتی آمور وزیر زادہ نے کہا ہے ہندوستان کے سب سے بڑی عدالت سے بابری مسجد کو شہید کرنے والوں کی باعزت بریت نہایت افسوس ناک ہے اور اس کی جتنی بھی مذمت کی جائے کم ہے، اس سے پتہ چلتا ہے کہ بھارت میں اقلیتوں کو حقوق نہیں مل رہے۔ انہوں نے کہا ہے کہ ترقیاتی کاموں کے معیار اور بروقت تکمیل پر کوئی سمجھوتا نہیں کیا جائیگا، وزیراعظم عمران خان کے کرپشن فری پاکستان ویژن کو عملی جامہ ہر صورت پہنانا ہے۔ وزیر زادہ نے کہا کہ تحریک انصاف کی حکومت میں کرپشن کرنے والوں کی کوئی جگہ نہیں، نہ خود ایک روپے کی کرپشن کرتے ہیں نہ کسی کو کرنے دینگے۔ وزیر زادہ نے زیر تعمیر لمبا ویڑا مندر نوشہرہ کی سولرائزیشن، کرائسٹ چرچ نوشہرہ میں واش رومز کے لئے 10 لاکھ روپے کا اعلان جبکہ کرائسٹ چرچ نوشہرہ میں مرمتی کام کے لئے ایکسین سی اینڈ ڈبلیو نوشہرہ کو موقع پر ہدایت جاری کردی ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے ضلع نوشہرہ کے ایک روزہ دورے کے موقع پر کیا ہے۔ دورے کے دوران مردان سے اقلیتی ایم پی اے روی کمار، ملک آفتاب خان ودیگر بھی معاون خصوصی کے ہمراہ تھے۔نوشہرہ میں اقلیتی کمیونٹی نے معاون خصوصی کا پرتپاک استقبال کیا۔ وزیر زادہ نے پہلی فرصت میں صوبائی حکومت کا نوشہرہ کے اقلیتی برادری کے لئے جاری ترقیاتی کاموں کا جائزہ لیا۔ انہوں نےکرائسٹ چرچ نوشہرہ میں 65 لاکھ روپے سے جاری کمیونٹی ہال اور کرائسٹ چرچ سکول میں 25 لاکھ روپے سے جاری مرمتی کام کا تفصیلی معائنہ کیا اور کہا کہ معائنہ کا مقصد کام کے معیار اور بروقت تکمیل ممکن بنانا ہے۔ معاون خصوصی نے صوبائی حکومت کے فنڈز سے زیر تعمیر، لمبا ویڑہ اور تیل گودام مندر کا بھی معائنہ کیا اور متعلقہ حکام کو کام کی بروقت تکمیل ممکن بنانے کی ہدایت کی۔ بعد ازاں معاون خصوصی نے ڈسٹرکٹ کونسل ہال میں اقلیتی برادری کے لئے منعقدہ چیکس ڈسٹریبیوشن تقریب سے خطاب بھی کیا۔ اپنے خطاب میں انہوں نے کہا کہ نوشہرہ کے لوگوں کی خوش قسمتی ہے کہ پرویز خٹک جیسا مخلص اور نڈر سیاستدان یہاں سے ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے کافی حد تک ملک کو کرپٹ مافیاز سے صاف کر لیا ہے، کرپٹ مافیا کے لئے نئے پاکستان میں کوئی جگہ نہیں ہے۔