وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا کے معاون خصوصی برائے اطلاعات و بلدیات کامران بنگش نے بس ریپڈ ٹرانزٹ کے حوالے سے سوشل میڈیا پر پھیلائے جانے والے بے بنیاد خبروں پر رد عمل ظاہر کرتے ہوئے کہا ہے کہ بی آر ٹی خیبرپختونخوا حکومت کا فلیگ شپ منصوبہ ہے جس کو روز اول سے اپوزیشن نے بے بنیاد پراپیگنڈا کی بنیاد پر عوام کے سامنے ایک نہ مکمل ہونے والا منصوبے کے طور پر پیش کیا لیکن صوبائی حکومت کی انتھک محنت کی بدولت مقررہ وقت سے پہلے ہم نے بی آر ٹی منصوبہ پایہ تکمیل تک پہنچایا۔ انہوں نے کہا کہ جو لوگ کہتے تھے کہ بی آر ٹی میں عوام سفر کرنے کو ترجیح نہیں دیں گے ان کے سب دعوے جھوٹ ثابت ہوئے۔ آج خوش قسمتی سے بی آر ٹی میں سفر کرنے کو عوام ترجیح دی رہی ہے۔

معاون خصوصی کامران بنگش نے کہا کہ بس ریپڈ ٹرانزٹ کے جتنے بھی فیڈر روٹس ہیں ان کو مکمل فعال بنانے کے لئے راہ ہموار ہو چکی ہے، حیات آباد کے رہائشیوں کے لئے فیڈرز روٹس فعال کئے جا چکے ہیں۔ جبکہ بی آر ٹی روٹس پر بسوں کی تعداد بھی بڑھا رہے ہیں تاکہ عوام کو مزید سفری سہولت دی جائے۔ اتنے بڑے منصوبے میں تکنیکی خرابی کو بعض لوگ تعصب کی بنیاد پر ایسا پیش کرتے ہیں جیسے بی آر ٹی رک گئی ہے۔ لیکن منفی پراپیگنڈے اس دن فیل ہوئے جس دن بی آر ٹی چل پڑی تھی۔

معاون خصوصی برائے اطلاعات و بلدیات کامران بنگش نے مزید کہا کراچی جیسے شہر میں اب تک ایسا منصوبہ نہ تو شروع کیا گیا ہے اور نہ ہی وہاں کی حکمران جماعت کا کوئی ارادہ ہے لیکن ہم کراچی کی عوام کی خاطر سندھ حکومت کے ساتھ تکنیکی تعاون کے لئے تیار ہیں، تاکہ وہاں کے عوام کو بھی ریلیف مل سکے.

عوام سے اپیل کرتے ہوئے معاون خصوصی کامران بنگش نے کہا کہ بی آر ٹی روٹ، بسز اور سٹیشنز کی صفائی برقرار رکھنا ہم سب کی مشترکہ اخلاقی ذمہ داری ہے اور اس حوالے سے انتظامیہ کے ساتھ بھرپور تعاون کیا جائے.