اسپیکر قومی اسمبلی اسد قیصر نے صوابی میں مون سون کی شجر کاری مہم کا افتتاح کر دیا۔ اسپیکر قومی اسمبلی نے گجو خان میں پودا لگا کر شجر کاری مہم کا آغاز کیا۔ آج ٹائیگر فورس کے دن کے حوالے سے ملک بھر میں مون سون شجر کاری مہم چلائی جا رہی ہے۔ صوابی میں مہم کے دوران ایک لاکھ 50 ہزار پودے لگائے جائیں گے۔ مقامی کمیونٹی اپنی مدد آپ کے تحت صوابی میں 60 ہزار پودے لگائے گی۔ تمام شاہراہوں اور سکول کالجز میں درخت لگائے جائیں گے۔ پوری پاکستانی قوم سے درخواست کرتا ہوں کہ آئیں مل کر اس مہم میں اپنا کردار ادا کریں۔ ہم سب سے مل کر اس مہم کو کامیاب بنانا ہے۔ شجر کاری ہمارے مستقبل کے لیے ضروری ہے۔ ہم نے پاکستان کو کلین اور گرین پاکستان بنانے کے خواب کو پورا کرنا ہے۔ وزیر اعظم کے سر سبز پاکستان کو دنیا بھر میں پذئرائی مل رہی ہے۔ عالمی اداروں نے گلوبل وارمنگ کے خاتمے کے لیے پاکستان کے کردار کو سراہا ہے۔ پوری دنیا موسمیاتی تبدیلی اور گلوبل وارمنگ کے خلاف اقدامات کی حمایت کر رہی ہے۔ وزیراعظم کا ملک میں 10 ارب پودے لگانے کا عزم قابل ستائش ہے۔ درخت لگانا صدقہ جاریہ ہے اور نبی کریم ﷺ کی سنت ہے۔  پارلیمان عوامی فلاح کے لیے قانون سازی کے لیے اپنا بھرپور کردار ادا کرے گی۔ پاکستان کو اپنی بین الاقوامی ذمہ دار یوں کا ادراک ھے اور اپنا مثبت کردار ادا کرتا رھے گا۔ ایف اے ٹی ایف کے حوالے سے حالیہ کی گی قانون سازی اس سلسلے کی کڑی ھے۔ پاکستان کو ایف اے ٹی ایف کی گرے لسٹ میں دھکیلنے کی مزموم بھارتی سازش کو کامیاب نہیں ھونے دس جائےگا۔ اپوزیشن سے حکومتی رابطے قائم ھیں اور دیگر زیر التوا قوانین بھی متفقہ رائے سے جلد پاس کیے جائیں گے۔ اسپیکر قومی اسمبلی نے صوابی میں پولیو کے خاتمے کی مہم میں بچوں کو پولیو کے قطرے بھی پلائے۔