محرم الحرام کے دوران امن و امان قائم رکھنے اور مختلف مکاتب فکر کے درمیان بھائی چارے کی فضا کو فروغ دینے کے لیے تمام ممکن اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔ ان خیالات کا اظہارڈپٹی کمشنر ڈیرہ محمد عمیر نے ڈپٹی کمشنر آفس کے کانفرنس ہال میں اہل سنت و اہل تشیع کے وفود سے الگ ملاقاتوں کے دوران کیا۔ اس موقع پر ایڈیشنل ڈپٹی کمشنر نور عالم محسود، ایڈیشنل ایس پی اسلم خٹک اور دیگر سول و پولیس افسران نے شرکت کی۔ اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر نے یقین دلایا کہ فریقین کے درمیان کیے گئے معاہدوں پر من و عن عمل درآمد کیا جائے گا اور کسی کو بھی قانون ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جائے گی تاہم انہوں نے دونوں مکاتب فکر کے اکابرین و علماء سے اپیل کی کہ وہ ماضی کی طرح اب بھی بڑے پن اور کھلے دل سے ڈیرہ اسماعیل خان کے امن و امان کو یقینی بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ اتحاد بین المسلمین جو کہ ہر مسلمان کا دینی فریضہ ہے کی آج اشد ضرورت ہے کیونکہ دشمن ہماری تاک میں بیٹھا ہوا ہے کہ کہیں انتشار کی چنگاری پھوٹے۔محرم الحرام کے انتظامات کا ذکر کرتے ہوئے ڈپٹی کمشنر نے کہا کہ ٹی ایم اے، واپڈا سمیت تمام متعلقہ محکموں کو ہدایات جاری کر دی گئی ہیں کہ وہ عاشور ہ محرم شروع ہونے سے قبل تمام انتظامات بطریق احسن مکمل کر لیں تاکہ عین موقع پر کسی قسم کی مشکل کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ انہوں نے مزید کہا کہ سیکورٹی کے فول پروف انتظامات کے لیے مقامی انتظامیہ پولیس اور دیگر قانون نافذ کرنے والی ایجنسیوں کی مدد سے ایک جامع پلان تشکیل دے رہے ہیں تاکہ ہر قسم کے حالات کا بہتر طور پر مقابلہ کیا جا سکے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ ڈیرہ اسماعیل خان کا امن جس سے یہاں رہنے والے لوگوں کا بلا امتیاز رنگ و نسل مستقبل وابستہ ہے کی خاطر تمام مکاتب فکر کے لوگ کشادہ دلی اور برداشت کے ساتھ ساتھ ایک دوسرے کے جذبات کی قدر کریں گے۔