وزیر اعلی خیبر پختونخوا محمود خان نے عید الاضحی کے موقع پر کورونا وبا کے ممکنہ پھیلاو کے پیش نظر احتیاطی تدابیر کے طور پر عید کا تہوار سادگی سے منانے کا فیصلہ کرتے ہوئے تمام کابینہ ممبران بشمول وزرا ، مشیروں اور معاون خصوصی کو ہدایت کی ہے کہ وہ بھی عید کا تہوار انتہائی سادگی سے اپنے گھروں پر منائیں، اپنے حجروں میں لوگوں سے عید نہ ملیں اور عید کے دنوں میں سیرو تفریح کے لئے سیاحتی مقامات کی طرف جانے سے گریز کریں۔ انہوں نے واضح کیا ہے کہ ابھی سیاحتی مقامات کو کھولنے کا فیصلہ نہیں ہوا ، عید کے موقع پر صوبے کی سیاحتی مقامات ہرقسم کی سیر و تفریح کے لئے بدستور بندھ رہیں گی لہذا تمام شہری عید کی چھٹیاں اپنے گھروں پر منائیں اور سیاحتی مقامات کا رخ نہ کریں تاکہ انہیں کسی بھی قسم کی تکلیف کا سامنا نہ کرنا پڑے۔ وزیر اعلی نے خود بھی احتیاطی تدابیر پر عمل کرتے ہوئے عید اپنی رہائش گاہ پر منانے اور کسی سے عید نہ ملنے کا فیصلہ کیا ہے۔
اس سلسلے میں یہاں سے جاری اپنے ایک بیان میں
وزیر اعلی نے تمام منتخب عوامی نمائندوں، سیاسی و مذہبی رہنماؤں اور عمائدین پر بھی زور دیا ہے کہ وہ خود بھی عید سادگی کے ساتھ اپنے گھروں پر منائیں، ایکدوسرے سے عید ملنے سے گریز کریں اور دوسروں کو بھی اس کی تلقین کریں۔
انہوں نے عوام سے پر زور اپیل کی ہے کہ وہ خود کو اور دوسروں کو کورونا وبا سے محفوط رکھنے کے لئے عید کے دنوں میں احتیاطی تدابیر پر سختی سے عمل کریں، سماجی فاصلوں کو یقینی بنائیں، عید اپنے گھروں پر منائیں، اپنے گھروں، ہجروں اور دیگر مقامات پر ہجوم سے گریز کریں۔ وزیر اعلی نے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ اگر ہم عیدالاضحٰی کے موقع پر کورونا وبا کے ممکنہ پھیلاو کو روکنے میں کامیاب رہے تو انشاءاللہ ہم مستقل طور پر اس وبا سے چھٹکارا حاصل کر سکیں گےجس کے لئے منتخب عوامی نمائندوں، سیاسی و سماجی شخصیات علماء سمیت معاشرے کے تمام طبقوں اور عوام کو ذمہ داری کا مظاہرہ کرنا ہوگا۔