وزیراعلی کے معاون خصوصی برائے اقلیتی امور  وزیر ذادہ نے کہا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کی صوبائی  حکومت اقلیتوں کی مالی معاونت اور انکی فلاح وبہبود کے لئے بھرپور اقدامات اٹھارہی ہے یہی وجہ ہے کہ گزشتہ مالی سال میں محکمہ اوقاف نے اپنے سالانہ ترقیاتی بجٹ کا 86فیصد خرچ کیا۔ ان خیالات کا اظہار معاون خصوصی برائے اقلیتی امور وزیر ذادہ نے بدھ کے روز محکمہ اوقاف کے سالانہ ترقیاتی پروگرام کے حوالے سے منعقدہ اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا ۔ اجلاس میں اقلیتی نشستوں پر منتخب ارکان صوبائی اسمبلی روی کمار، رنجیت سنگھ، سیکرٹری اوقاف فرخ سائر، ڈپٹی سیکرٹری اوقاف علی راجہ، پلاننگ آفیسر سجاد، سیکشن آفیسر محمد ہارون اور دیگر متعلقہ حکام نے شرکت کی۔ معاون خصوصی وزیرزادہ نے کہا کہ وزیراعلی محمود خان اقلیتی برادری کے مسائل کے حل اور انکی فلاح وبہبود کے لئے انتہائی سنجیدہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ حالیہ کابینہ کے اجلاس میں وزیراعلی نے تمام محکموں کو ہدایات جاری کی تھی کہ وہ ستمبر سے پہلے سالانہ ترقیاتی پروگراموں میں شامل سکیموں کے لئے پی سی ون مرتب کریں اس لیے محمکہ اوقاف نے وزیراعلی کی ہدایات کے مطابق گزشتہ سال کے ترقیاتی پروگرام کا جائزہ اور آئندہ مالی سال کے پروگرام کے حوالے سے اجلاس منعقد کیا ہے۔معاون  خصوصی نے کہا کہ صوبائی حکومت اقلیتی برادری کے لئے صوبے کے دیگر اضلاع سمیت ضم شدہ اضلاع میں ہاوسنگ سکیم کا اجرا کریں گی۔ بندوبستی اضلاع میں ہاوسنگ سکیموں کی فیزیبلٹی سٹڈی کے لئے 5 کروڑ جبکہ ضم شدہ اضلاع میں دو کروڑ روپے مختص کئے ہیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ وزیراعلی کی ہدایت کے مطابق صوبے میں اقلیتی برادری کے لئے چھوٹے پیمانے پر کاروبار شروع کرنے کے لئے بندوبستی اضلاع میں 5 کروڑ روپے اور ضم شدہ آضلاع میں 10 کروڑ روپے کی مالی معاونت دی جائیگی۔ وزیر ذادہ نے ہدایت جاری کرتے ہوئے کہا کہ محمکہ اوقاف تمام ترقیاتی سکیموں کے لئے ورک پلان تیار کریں تاکہ ترقیاتی سکیم ورک پلان کے مطابق مقررہ مدت میں مکمل کئے جاسکیں۔