خیبر پختونخوا کے وزیر زراعت و لائیو سٹاک محب اللہ خان نے کہا ہے کہ عید الاضحی کے موقع پر مال مویشیوں کے منڈیوں میں حکومتی احکامات پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے ، مال مویشیوں کے منڈیوں میں بچوں اور عمر رسیدہ افراد کے داخلہ پر مکمل پابندی ہو گی۔ منڈیوں میں مال مویشی کی خرید و فروخت کے علاوہ ہر قسم کی سرگرمیوں پر پابندی لگائی ہے تاکہ منڈیوں میں کم سے کم افراد آئیں تاکہ کورونا سے عوام کو تحفظ دیا جاسکے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کے روز پشاور میں ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر سیکرٹری زراعت ڈاکٹر محمد اسرار، ڈی جی لائیو سٹاک(توسیع) ڈاکٹر عالم زیب مہمند کے علاوہ دوسرے حکام بھی موجود تھے۔صوبائی وزیر کو بتایا گیا کہ صوبہ بھر میں مال مویشیوں کی منڈیوں میں جانوروں پر سپرے بھی کیا جا رہا ہے، کورونا اور کانگو بیماری سے آگاہی کے لئے پمفلٹ بھی تقسیم کئے گئے ہیں اور اس سلسلے میں کورونا کے ساتھ ساتھ کانگو کی روک تھام کے لئے مختلف ٹیمیں اور سپرے کے لئے خصوصی گاڑی تیار کی گئی ہے جو کہ صوبے کی تمام مویشی منڈیوں میں سپرے کرے گی۔ اس طرح تمام مویشی منڈیوں میں مویشیوں کے لئے بانس کے حصار قائم کئے گئے ہیں اور منڈی میں ہرجانور کے داخل ہونے پر سپرے کیا جارہا ہے اور اس کے ساتھ ساتھ ڈاکٹرز اور ویٹنری عملہ ہمہ وقت موجود رہے گا تاکہ کورونا اور کانگو سے تحفظ کو ممکن بنایا جا سکے۔محب اللہ خان نے کہا کہ حکومت کی طرف سے جاری ایس او پیز پر عمل درآمدکو یقینی بنایا جائے۔ مال مویشی کی منڈیوں میں موجود تمام افراد ماسک اور سینٹائزر کا استعمال کریں نیز عید کے دن سماجی دوری اختیارکریں تاکہ کورونا سے کوئی متاثر نہ ہو سکے۔صوبائی وزیر نے کہا کہ مویشی منڈیو ں میں شکایات سیل اور ہینڈ واش پوائنٹس بھی قائم کئے جائیں گے۔ حکومت کی مقررکردہ مویشی منڈیوں کے علاوہ شہروں میں غیر قانونی منڈیوں کے قیام کے خلاف سخت کارروائی کی جائے گی۔ صوبائی وزیر نے کہا کہ مویشی منڈیوں میں ٹی ایم اے کا عملہ باقاعدہ یونیفارم میں ہو گا اور اپنے کارڈز بھی آویزاں کرے گا۔