وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے جلوزئی اکنامک زون کا باقاعدہ افتتاح کیا۔ 257 ایکڑ اراضی پر محیط اس اکنامک زون میں آٹھ ارب روپے کی نجی سرمایہ کاری متوقع ہے، یہ علاقے کی ترقی و خوشحالی کے لئے یہ ایک گیم چیلنجر منصوبہ ہے جس سے روزگار کے بلواسطہ اور بلا واسطہ 50ہزار نئے مواقع پیدا ہونگے۔ صوبائی دارالحکومت کے قریب ہونے ،انجینئرنگ یونیورسٹی اور نئی ہاو¿سنگ سکیموںسے مستقل ہونے کی وجہ سے یہ اکنامک زون حقوق اہمیت کا حامل ہے جو دواسازی، فروٹ پراسسنگ، اسلحہ سازی، فوڈ پیکجنگ، فرنیچر ، کنسٹرکشن، ماربل، گرینائٹ اور دیگر صنعتوں کے لئے انتہائی موزوں ہے۔ اب تک اس نئے اکنامک زون میں مختلف قسم کی نئی صنعتیں لگانے کے لئے چارسو کے قریب درخواستیں موصول ہوئی ہیں۔
افتتاحی تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ محمود خان نے کورونا کی موجودہ مشکل صورتحال میں اس اکنامک زون کے افتتاح کو انتہائی اہمیت کا حامل اور وقت کی اہم ضرورت قرار دیتے ہوئے کہا کہ منصوبے کا کامیاب افتتاح صوبے میں صنعتوں اور سرمایہ کاری کے فروغ کے ساتھ روزگار کے مواقع پیدا کرنے کے لئے موجودہ صوبائی حکومت کی مو¿ثر کوششوں کا نتیجہ ہے اور خصوصاً کورونا صورتحال میں یہ پیش رفت ایک اہم سنگ میل کی حیثیت رکھتا ہے۔ اس اکنامک زون میں صنعتیں لگانے کے لئے سرمایہ کاروں کی طرف سے غیر معمولی دلچسپی کا مظاہرہ صوبائی حکومت کی طرف سے باعث اطمینان اور حوصلہ افزا ءامر ہے۔ وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبے میں صنعتی سرگرمیوں کے فروغ کے ذریعے لوگوں کو روزگار کے زیادہ سے زیادہ مواقع فراہم کرنے کے لئے صوبائی حکومت ایک جامع منصوبہ بندی کے تحت کام کر رہی ہے اور عنقریب اس طرح کے مزید اکنامک زونز کا بھی افتتاح کیا جائیگا جن میں چترال، ڈی آئی خان، حطار اور دیگر شامل ہیں۔ محمود خان نے مزید کہا کہ سی پیک منصوبے کے تحت صوبے کے فلیگ شپ پروجیکٹ رشکئی اکنامک زون کے قیام پر کام تیزی سے جاری ہے اور عنقریب وزیراعظم پاکستان خود قومی اہمیت کے حامل اس منصوبے کا افتتاح کریں گے جو پورے صوبے کی تقدیر کو بدل کر رکھ دے گا۔