وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے کہا ہے کہ کورونا وباءکی وجہ سے ہر ایک شعبہ اور طبقہ بری طرح متاثر ہوا ہے اور صوبائی حکومت اپنے محدود وسائل کے باوجود تمام متاثرہ شعبوں کو ریلیف دینے کی نہ صرف خواہش رکھتی ہے بلکہ اس سلسلے میں ہر ممکن اقدامات بھی کر رہی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار اُنہوںنے جمعہ کے روز خیبرپختونخوا بار کونسل کے منتخب عہدیداروں کے ایک وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا جس نے صوبائی وزیر قانون سلطان محمد کی قیادت میں اُن سے ملاقات کی اور موجودہ صورتحال میں وکلا برادری کو درپیش مشکلات کے حوالے سے بات چیت کی۔ وفد کے ارکان میں خیبرپختونخوا بار کونسل کے وائس چیئرمین ایڈوکیٹ شاہد رضا ملک کے علاوہ سیف الرحمن، جاوید اﷲ، قیصر علی شاہ، شاہد قیوم، سجاد شاہ اور دیگر شامل تھے۔ سیکرٹری قانون مسعود احمد بھی اس موقع پر موجود تھے۔ وفد سے باتیں کرتے ہوئے وزیراعلیٰ نے کہاکہ کورونا وباءاﷲ کی طرف سے ایک امتحان اور آزمائش ہے جس میں ہم سب نے ثابت قدمی کا مظاہر ہ کرنا ہے اور وباءپر جلد قابوپانے کیلئے اپنی ذمہ داریاں ادا کرنی ہیں ، ہم اجتماعی کاوش کے ذریعے ہی اس آزمائش میں سرخرو ہو سکتے ہیں ۔ حکومت اس وباءسے موثر انداز میں نمٹنے کیلئے ہر سطح پر اقدامات کر رہی ہے۔ ہمیں ایک طرف وباءکے پھیلاﺅ کو روکنا ہے تو دوسری طرف لوگوں خصوصاً معاشرے کے کمزور طبقوں کو بھوک اور افلاس سے بھی بچانا ہے ۔ اُنہوںنے مزید کہا کہ اس وقت حکومت کے سامنے دو اہم ترجیحات ہیں۔ کورونا کے مریضوں کو علاج معالجے کی بہتر سہولیات کی فراہمی کیلئے صحت کے شعبے کو مستحکم بنانا ہے اور دوسری طرف معیشت کے پہیے کو چلانے کیلئے لوگوں کو روزگار کے مواقع بھی فراہم کرنے ہیں ۔