وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان سے وزیراعظم پاکستان کی معاون خصوصی برائے سماجی تحفظ ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے بدھ کے روز اُن کے دفتر میں ملاقات کی اور صوبے میں کورونا وباءکی وجہ سے متاثر ہونے والے مستحق افراد کو نقد امدادی رقوم کی تقسیم کے علاوہ مسافروں اور دیگر مستحق افراد کو مفت خوراک کی فراہمی کے لنگر خانوں کے انتظام و انصرام سے متعلق اُمور پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ ملاقات میں احساس پروگرام کے تحت مالی امداد کے لئے زیادہ سے زیادہ مستحق آبادی کو پروگرا م میں شامل کرنے کے لئے نیا سروے کرنے میں اتفاق کرتے ہوئے اس سلسلے میں جلد ہی ورک پلان تیار کرنے کا فیصلہ کیا گیا۔ چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا ڈاکٹر کاظم نیاز بھی اس موقع پر موجود تھے۔ کورونا کی موجودہ صورتحال کی وجہ سے صوبے کے متاثرہ مستحق خاندانوں کو احساس پروگرام کے تحت ریلیف پیکج کی مد میں نقد رقوم کی تقسیم کے حوالے سے وزیراعلیٰ نے کہا کہ صوبے میں اس ریلیف پیکج کی تقسیم انتہائی شفاف اور منظم انداز میں ہوئی ہے اور صرف مطلوبہ معیار پر پورا اُترنے والے مستحق خاندان ہی اس پیکج سے مستفید ہوئی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان کی قیادت میں ڈاکٹر ثانیہ نشتر اور اس کی پوری ٹیم نے کورونا ریلیف پیکج کی تقسیم کے عمل کو کامیاب بنانے کے لئے جس انداز میں کام کیا ہے وہ قابل ستائش ہے۔ وزیراعلیٰ نے اس سلسلے میں چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا، اس کی ٹیم اور تمام اضلاع کی انتظامیہ کے کردار کی بھی تعریف کی۔ اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے ڈاکٹر ثانیہ نشتر نے صوبے میں احساس ایمرجنسی کیش پروگرام کو کامیاب بنانے میں صوبائی حکومت کے تعاون اور اشتراک کار کو مثالی قرار دیتے ہوئے کہاکہ وہ آئندہ بھی اس طرح کے تعاون اور اشتراک کار کی اُمید رکھتی ہیں۔