مشیر اطلاعات خیبر پختونخوا اجمل خان وزیر نے کہا ہے کہ صوبائی حکومت نے عام تعطیل میں 31 مئی تک کی توسیع کی ہے، تمام ضروری سرکاری دفاتر کے علاوہ دیگر دفاتر 31 مئی تک بند رہینگے۔ پیٹرول اور سی این جی پمپس چوبیس گھنٹے کھلے رکھنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے۔ پیر سے تمام پبلک ٹرانسپورٹ کو ایس او پیز کے ساتھ کھولنے کی اجازت دی گئی ہے ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز اطلاع سیل سول سیکرٹریٹ پشاور میں میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے کیا۔اجمل وزیر نے کہا کہ تمام فیصلے وفاقی حکومت سے مشاورت کے بعد وزیراعلی محمود خان کی قیادت میں ٹاسک فورس کے اجلاس میں کئے گئے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت نے بیوٹی سیلون اور حجام کی دکانوں کو ایس او پیز کے ساتھ ہفتے میں تین دن یعنی جمعہ ، ہفتہ اور اتوار کو 4 بجے تک کھلے رکھنے کی اجازت دے دی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ حجام اور سیلون شاپس میں صرف ضروری سروس فراہم کرنے کی اجازت ہوگی یعنی ہئیر کٹنگ کرنا اسکے علاوہ شیو بنانے، اور دیگر غیر ضروری سروس سے اجتناب کیا جائیگا۔ صفائی ستھرائی کا خاص خیال رکھا جائیگا اور سروس فراہم کرنے والا اور سروس لینے والا دونوں صابن سے ہاتھ دھونا اور فیس ماسک کا استعمال یقینی بنائیں گے جبکہ سیلون اور حجام کی دکانوں پر صابن اور سینٹائزر کی فراہمی بھی یقینی بنائی جائے گی۔اجمل وزیر نے مزید کہا کہ حجام اور سیلون شاپس پر ہجوم بنانے سے گریز کیا جائیگا۔سماجی دوری کا خاص خیال رکھا جائیگا اور شاپس کے ویٹنگ روم میں بیٹھنے کی اجازت نہیں ہوگی۔سروس فراہم کرنے کے دوران استعمال ہونے والی اشیاء سینٹائزر سے صاف کرنا اور شاپس کے دروازے اور کھڑکیاں کھلے رکھنے ہونگے اسکے علاوہ سروس فراہم کرنے والی کرسی سمیت شاپس کے تمام فرنیچر کو ڈس انفیکٹ کرنا لازمی ہوگا اور تولیہ کے استعمال پر پابندی ہوگی۔صوبے میں پبلک ٹرانسپورٹ کی بحالی کے بارے میں اجمل وزیر کا کہنا تھا کہ پیر سے ٹرانسپورٹ بحال کی جائے گی اور تمام اضلاع کے کمشنرز،ریجنل ٹرانسپورٹ اتھارٹیز کے ساتھ مل کر ایس او پیز تشکیل دیں گے جبکہ ضلعی انتظامیہ، ٹرانسپورٹ اتھارٹیز اور ٹرانسپورٹرز ایس او پیز پر عمل درآمد کو یقینی بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ کمشنرز حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنے ڈویژن کے اندر انفرادی روٹ کھولنے کا فیصلہ کریں گے اور ایک ضلع کے اندرون یا ایک ضلع سے دوسرے ضلع کے روٹ کا فیصلہ بھی کمشنرز کریں گے۔