خیبرپختونخوا کے وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑا،وزیر اعلی کے معاون خصوصی برائے ابنوشی ریاض خان، چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا کاظم نیاز اور سیکرٹری محکمہ داخلہ اکرام اللہ خان نے پیر کے روز ضلع بونیر کا دورہ کیا اور ضلع میں کورونا وائرس سے نمٹنے کےلئے کئے گئے اقدامات کا جائزہ لے کر اطمینان کا اظہار کیا۔ اس موقع پر محکمہ صحت کے ضلعی افسران نے وزیر صحت کوضلع میں کورونا وائرس سے نمٹنے کے متعلق تمام کئے گئے اقدامات سمیت ائیسولیشن اور قورنٹین سینٹرز بارے تفصیلی بریفننگ دی۔بریفنگ میں ضلع بونیر میں رپورٹ کئے گئے کورونا وائرس بارے میں بتایا گیا کہ ضلع بھر میں تین پازیٹیو اور انیس نیگیٹو کیسز رپورٹ ہوئے ہیں جبکہ چھ کا رزلٹ باقی آنا ہے۔ دریں اثنا یہ بھی بتایا گیا کہ ضلع بھر میں تمام ائیسولیشن اور قورنٹین سنٹرز میں تقریباً 314 بیڈز کا انتظام کیا گیا ہے۔ اس موقع پر وزیر صحت نے کہا کہ صوبے کے دیگر اضلاع کی طرح بونیر میں بھی کورونا سے عوام کو بچانے کے لئے سنجیدہ اقدامات اٹھائے گئے ہیں اور صوبائی حکومت تمام وسائل ہنگامی بنیادوں پر بروئے کار لا رہی ہے تا کہ اسکو مذید بہتر سے بہتر بنایا جاسکے۔ تیمور سلیم نے ڈاکٹرز،پیرامیڈکس،نرسز،پولیس اور ریسکیو کے اہلکاروں کی کارکردگی قابل ستائش اور تعریف ہے جو اپنے جان کی پرواہ کیے بغیر اس مشکل گھڑی میں عوام کی خدمت کر رہے ہیں۔ وزیر اعلیٰ کے معاون حصوصی ریاض خان نے ضلع بونیر کے عوام سے التماس کرتے ہوئے کہا کورونا وائرس کے پھیلاؤ کو روکنے کے حکومتی احکامات پر عمل کریں اور سماجی رابطوں اور عوامی میل جول کو کم سے کم کریں اور حکومتی اقدامات میں ان سے تعاون کریں۔ انہوں نے مزید کہا کہ تاجر برادری کی طرف سے جزوی لاک ڈاؤن کی عملداری قابل ستائش ہے تاہم بازاروں میں لوگوں کو بلا ضرورت ایک جگہ پر جمع ہونے کو روکنے کی ضرورت ہے۔عوام حفاظتی تدابیر پر عمل کریں ماسک پہنے ، چھینکتے اور کھانستے ہوئے اپنے منہ اور ناک کو ڈھانپے تاکہ کرونا کے ممکنہ پھیلاؤ کو روکا جا سکے۔