کورونا جیسی جان لیوا وباء سے بچنے کی خاطر ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر شانگلہ ملک اعجاز نے اپنے دفتر میں تاجربرادری، صدور بازار ہائے اور تمام علمائے کرام کیساتھ میٹنگ کی میٹنگ میں ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ملک اعجاز نے کہا کہ راشن کی دکانوں پر لوگوں کی رش نہیں ہونا چاہئے جب بھی مکمل لاک ڈاؤن ہو تو اس وقت کوئی بھی دکان ما سوائے میڈیکل سٹور کھلے نہیں ہونگے لیکن شہریوں پر اشیائے خوردونوش مہنگے داموں فروخت بھی نہیں ہونا چاہئے ہم سب اکٹھا ہو کر عوام کی فلاح اور بہبود کیلئے کام کریں گے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر شانگلہ ملک اعجاز نے مزید کہا کہ کورونا وائرس سے بچاؤ کے لئے تمام بازاروں میں جراثیم کش سپرے کرنا چاہئے تاکہ اس وباء کی سدباب ہو سکیں انہوں نے مزید کہا کہ ذخیرہ اندوزی نہیں ہونا چاہئے ہم نہیں چاہتے کہ علاقے کے لوگوں میں خوف پیدا ہو جائے، لاک ڈاؤن کے موقع پر پولیس کے ساتھ مکمل تعاون کریں میرا جینا مرنا شانگلہ کے لوگوں کیساتھ ہے، شانگلہ کے عوام بہت غریب ہیں اس لئے سستے داموں اشیائے خوردونوش فروخت کریں یہاں بلانے اور میٹنگ کا مقصد یہ تھا کہ راشن کی گاڑی ہم کبھی نہیں رکتے صرف راشن،سبزیوں اور میڈیکل سٹور کھلے رہینگے عوام مسلسل اس وباء کی مذاق اڑا رہے ہیں اور اپنے گھروں میں نہیں ٹھہرتے انہوں نے مزید کہا کہ دکانوں میں گپ شپ سے پرہیز کیا جائے، مہنگائی سے اجتناب کرے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ملک اعجاز نے مزید کہا کہ شانگلہ پولیس مکمل تعاون کر رہی ہے لیکن ذخیرہ اندوزی اور گرانفروشی ہرگز قابل قبول نہیں انشاء اللہ ہم بہت جلد ہی اس مشکل گھڑی سے نکل جائیں گے ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر ملک اعجاز نے تمام علماء کرام کیساتھ بھی جاری وباء کی روک تھام کے حوالے سے تفصیلی گفت و شنید کی ڈی پی او شانگلہ ملک اعجاز نے کہا کہ مسجدوں میں لاؤڈ سپیکر کے ذریعے شہریوں میں اگاہی پیدکرنا چاہئے اور تمام مساجدوں میں کلورین کی جراثیم کش سپرے کرنا چاہئے عوام اب بھی اس وباء کو گپ سمجھتے ہیں اس عذاب سے ہمیں سبق سیکھنا چاہئے آخر میں ایک عالم دین نے بھی اس جاری وباء پر روشنی ڈالی اور میٹنگ میں باور کرایا کہ انشاء اللہ حکومتی پالیسیوں کے مطابق اس وباء کی روک تھام کے لئے تمام ہدایات پر عمل کریں گے آخر میں وباء کو ختم کرنے کیلئے خصوصی دعائیں بھی مانگی گئیں۔