خصوصی اجلاس میں صوبہ میں کرونا وائرس سے بچاؤ سے متعلق اقدامات پرتفصیلی غور و غوض کیا گیا اور کرونا وائرس سے بچاؤ اور مکمل تدارک کیلئے سول و عسکری مشترکہ تعاون و اقدامات اٹھانے کا فیصلہ کیا گیا۔اس موقع پر محکمہ صحت اور محکمہ ریلیف کے انتطامی سربراہان کی جانب سے اجلاس کوصوبہ میں کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے حفاظتی تدابیر اور اقدامات پر تفصیلی بریفنگ بھی دی گئی۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے گورنر خیبر پختونخوا شاہ فرمان کاکہناتھاکہ کرونا وائرس علاقائی مسئلہ نہیں ہے بلکہ ایک عالمی وباء کی شکل اختیارکرچکا ہے اور دنیا کے بیشتر ممالک اس وائرس سے متاثر ہوئے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے صوبائی حکومت بشمول عسکری ادارے کرونا وائرس سے نمٹنے کیلئے پوری طرح چوکس ہیں اور اس ضمن میں متعدد اہم فیصلے کئے گئے ہیں جن پر عملدرآمد جاری ہے، صوبہ کے عوام کو چاہئے کہ وہ زیادہ سے زیادہ احتیاط برتیں اور کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے صوبائی حکومت کے ساتھ تعاون کریں اور سول و عسکری سطح پر اٹھائے گئے مشترکہ حفاظتی اقدامات پر عملدرآمد یقینی بنایئں۔ واضح رہے کہ کرونا وائرس سے بچاؤ کیلئے ایپکس کمیٹی اجلاس میں بھی حفاظتی اقدامات پر عملدرآمد کرتے ہوئے اجلاس کے تمام سول و عسکری شرکاء بشمول گورنر اور وزیر اعلی نے ایک دوسرے سے مصافحہ نہیں کیا اور نہ ہی ایک دوسرے سے بغل گیر ہوئے۔ایپکس کمیٹی خصوصی اجلاس میں صوبائی وزیر صحت تیمور سلیم جھگڑا، چیف سیکرٹری خیبر پختونخوا ڈاکٹر کاظم نیاز، انسپکٹر جنرل پولیس ثناء اللہ عباسی، رنسپل سیکرٹری برائے گورنرنظام الدین، سیکرٹری ریلیف عابد مجید، سیکرٹری محکمہ صحت سمیت دیگرسول و عسکری حکام نے بھی شرکت کی۔