وزیراعظم عمران خان کی خصوصی ہدایات پر وزیراعلٰی محمود خان نے صوبہ بھر میں ملاوٹ اور زایدلمیعاد اشیا کی فروخت کیخلاف میگا کریک ڈاون کی تاکید کی ہے جسکی بجآوری کیلئے فوڈ اتھارٹی نے صوبہ بھر میں میگا کریک ڈاون کا آغاز کرتے ہوئے اشیائے خوردونوش کی چھ خصوصی اجزا میں ملاوٹ کیخلاف کمپین کا آغاز کیا ہے۔ ڈائریکٹر جنرل کے پی فوڈ اتھارٹی سہیل خان نے یہاں سے جاری ایک بیان میں کہا کہ محکمہ داخلہ کی جانب سے ضلعی سطح پر ملاوٹ کیخلاف ٹاسک فورس کا قیام عمل میں لایا جاچکا ہے جس میں فوڈ اتھارٹی عمل ان لائن ڈیپارٹمنٹس کو تکنیکی معاونت فراہم کررہی ہے۔
ملاوٹ کا خاتمہ ۔صحتمند خیبر پختونخوا کے عنوان سے ملاوٹ اور ذائدالمیعاد اشیائے خوردونوش کیخلاف صوبہ گیر کریک ڈاون کا ذکر کرتے ہوئے ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے بتایا کہ دودھ، دالیں،مصالحہ جات، چائے کی پتی، گھی اور کوکنگ آئل سمیت بوتلوں میں پیک اور نلکے کے پانی میں ملاوٹ اور حد میعاد سے تجاوز پر خصوصی آپریشنز ترتیب دئے گئے ہیں جو کہ پچھلے ایک ہفتے سے صوبے کے طول و عرض میں جاری ہے۔
سہیل خان نے بتایا کہ اس مد میں آج ڈیرہ اسماعیل خان میں نکاسی آب پر زیر کاشت چار ایکڑ اراضی پر لگی سبزیوں کو تلف کردیا گیا۔ ضلعی انتظامیہ نے فوڈ اتھارٹی اہلکاروں کی موجودگی میں کریک ڈاون انجام دیا۔
ملاوٹ مافیا سے نمٹنے کیلئے فیکٹریوں، ہول سیل ڈیلرز اور ڈسٹری بیوٹرز سمیت عام دوکانداروں کی چیکنگ سے اور ان سے سیمپلز کی کلیکشن کی جارہی ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ٹاسک فورس میں پبل ہیلتھ انجینئیرنگ، ضلعی انتظامیہ، لائیو سٹاک، محکمہ خوراک اور ضلعی پولیس افسران سمیت دیگر لائن ڈیپارٹمنس کو ممب بنایا گیا ہے جو کہ فوڈ اتھارٹی کی تکنیکی معاونت سے صوبہ بھر میں ملاوٹ اور زائدالمیعاد اشیاکے فروخت کیخلاف کریک ڈاون کے بعد ہفت روزہ اور ماہانا رپورٹس پیش کرینگی۔
ڈی جی فوڈ اتھارٹی نے مزید بتایا کہ دودھ اور گوشت کے ماڈل بزنس سنٹر کے قیام بارے تاجر برادری سے پشاور سمیت دیگر سات ڈویژنل اضلاع میں بات چیت ہوگئ ہے جبکہ تاجروں کو لائسنس تک رسائی کو ممکن بنانے کیلئے تمام تر عمل آن لائن اور سہل کردیا گیا ہے۔ ملاوٹ کا خاتمہ ۔صحتمند خیبر پختونخوا کریک ڈاون کی تفصیلات بتاتے ہوئے ڈائریکٹر جنرل سہیل خان نے بتایا کہ ایک ہفتے میں آٹھ سو سے زائد کی انسپکشنز کے دوران فوڈ سیفٹی سٹینڈرڈز کی خلاف ورزی پر اشیائے خوردونوش کے 64 مقامات کو سیل کردیا گیا ہے جبکہ 22,068 کلوگرام زائد المیعاد اور ملاوٹی اشیا تلف کردی گئی ہیں۔ اسی طرح مختلف وائلیشنز پر سات لاکھ کے جرمانے عائد کئے گئے جبکہ تاجروں کو راغب کرنے کیلئے صوبے کے بارہ تاجر تنظیموں کیساتھ مشاورت کی جاچکی ہے۔
ڈی جی فوڈ اتھارٹی سہیل خان نے بتایا کہ فوڈ اتھارٹی صوبے کے عوام کو محفوظ اور صاف خوراک کی فراہمی میں اپنا کلیدی کردار اد کررہا ہے اور اس ضمن میں عوام سے التماس ہے کہ کسی بھی جگہ ملاوٹ کی نشاندہی کرنے کیلئے سوشل میڈیا کے زریعے یا پھر فوڈ اتھارٹی کے ویب سائٹ پر کمپلین درج کرے۔