وزیراعظم پاکستان عمران خان کی زیر صدارت تمام صوبائی حکومتوں کا اجلاس ویڈیو کانفرنسنگ کے ذریعے منعقد ہوا، جس میں تمام صوبوں میں خود ساختہ مہنگائی ، ذخیرہ اندوزوں اور اشیائے خوردو نوش میں ملاوٹ کے خلاف کئے گئے اقدامات پر تفصیلی بریفینگ دی گئی ۔ اجلاس میں وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان ، وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار، چیف سیکرٹری سندھ ، چیف سیکرٹری بلوچستان اور دیگر اعلیٰ حکام نے شرکت کی ۔ وزیراعظم نے خیبرپختونخوا حکومت کی جانب سے کئے گئے اقدامات کو سراہتے ہوئے کہا کہ اشیائے خوردونوش میں ملاوٹ ایک قومی مسئلہ ہے جس سے نہ صرف مختلف قسم کی بیماریاں پھیل رہی ہیں بلکہ بچوں کی نشوونما پر بھی مضر اثرات مرتب ہو رہے ہیں۔اُنہوںنے چاروں صوبائی حکومتوں کو ہدایت کی کہ ایک ہفتے کے اندر اشیائے خوردو نوش میں ملاوٹ کی روک تھام کیلئے تفصیلی حکمت عملی مرتب کریں جس کے بعد مسئلے سے نمٹنے کیلئے ملکی سطح پر حکمت عملی وضع کی جائے گی ۔ وزیراعظم کو بریفینگ دیتے ہوئے وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے کہا کہ وہ از خود ڈیجیٹل ڈیش بورڈ کے ذریعے صوبے بھر میں قیمتوں ، ذخیرہ اندوزی ، ملاوٹ، تجاوزات ،کھلی کچہری اور دیگر انتظامی اُمور کی مانیٹرنگ کر رہے ہیںجس میں تمام تر تفصیلات اور معلومات آزادانہ اور تھر ڈ پارٹی کے ذریعے حاصل کی جاتی ہیں، جس کے بعد ملوث عناصر کے خلاف ٹارگیٹڈ کاروائی عمل میں لائی جاتی ہے ۔