وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے صوبائی کابینہ کے تمام وزراءکو قلیل المدتی ، وسط المدتی اور طویل المدتی ترقیاتی اہداف ، پالیسیوں اور اصلاحات کیلئے منصوبہ بندی کرنے کی ہدایت کی ہے ، اور کہا ہے کہ مجوزہ پلان کے نفاذکو ہر صورت یقینی بنایا جائیگا ۔ وزیراعلیٰ نے واضح کیا ہے کہ صوبے کی عوام نے تحریک انصاف کی کارکردگی جس میں عوام دوست پالیسیاں، اچھی طرز حکمرانی اور فلاحی ریاست کے قیام کے لئے ٹھوس اقدامات شامل ہےں ، کو مدنظر رکھتے ہوئے صوبے میں مسلسل دوسری بار تحریک انصاف کو اقتدار دیا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ صوبائی حکومت عوامی توقعات پر ہر صورت پورا اترنا چاہتی ہے ۔ عوامی خدمات کی فراہمی میں کسی قسم کی کوتاہی برداشت نہیں کی جائیگی۔ وہ کیبینٹ روم سول سیکرٹریٹ پشاور میں انتظامی سیکرٹریز کمیٹی اجلاس کی صدارت کر رہے تھے۔ اجلاس میں چیف سیکرٹری خیبرپختونخوا اور صوبے کے تمام محکموں کے انتظامی سیکرٹریوں نے شرکت کی ہے۔ وزیراعلیٰ نے انتظامی سیکرٹریوں کو ہدایت کی ہے کہ صوبے کے تمام محکموں میں نا اہل اور بدعنوانی میں ملوث افسران کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے، اور کہا ہے کہ صوبے میں میرٹ اور شفافیت کوہر قیمت پر یقینی بنایا جائےگا اور اچھی کارکردگی کے حامل اور ایماندار افسران کو اہم اور مو¿ثر عہدوں پر تعینات کیا جائیگا۔ وزیراعلیٰ نے یہ بھی ہدایت کی ہے کہ ہر محکمہ عوام کو صوبائی حکومت کے اقدامات اورترقیاتی منصوبوں سے باخبر رکھنے کے لئے مو¿ثر کمیونیکیشن حکمت عملی وضع کریں تاکہ صوبے کے عوام صوبائی حکومت کے اقدامات سے بھرپور استفادہ کر سکیں۔ وزیراعلیٰ نے محکمہ مواصلات و تعمیرات کو ہدایت کی ہے کہ محکمہ کمیشن کے رواج کے خاتمے کے لئے ہنگامی بنیادوں پر اقدامات اٹھائے۔ وزیراعلیٰ نے کہا ہے کہ ہر محکمہ سرکاری امور کی ڈیجیٹائزیشن پر خصوصی توجہ مرکوز کرے تاکہ صوبے میں سرکاری نظام کو مزید مو¿ثر بنایا جاسکے ، جس سے نہ صرف عوام کو بھر وقت خدمات کی فراہمی ممکن ہو سکے گی بلکہ محکموں میں تاخیری حربوں کی روک تھام بھی یقینی ہو سکے گی۔ انہوں نے تمام محکموں کو سمریوں کی فوراً اور بھروقت انجام دہی یقینی بنانے کی بھی ہدایت کی ہے۔ وزیراعلیٰ نے نئے ضم شدہ قبائلی اضلاع کے سرکاری محکموں میں سرکاری امور میں آسانی پیدا کرنے اور تمام متعلقہ محکموں کے خالی آسامیوں پر فوری بھرتی یقینی بنانے کی بھی ہدایت کی ہے۔