ٓآگاہی اور پشاور یونیورسٹی نے مفاہمت کی یاداشت پر دستخط کے زریعے ریسرچ اینڈ ڈیولپمنٹ کے ذریعے عوامی پالیسی کے حل کیلئے فیوچر چیلنجز پر، مشترکہ عزم کا اظہار کیا ہے جامعہ پشاور میں ایم او یو تقریب کے دوران آگاہی کی جانب سے صدر پروش چوہدری ، عامر جہانگیر اور فوکل پرسن روبینہ جاوید جبکہ جامعہ پشاور کی جانب سے وائس چانسلر پروفیسر ڈاکٹر محمد آصف خان ، فوکل پروان ڈاکٹر ضیاء عبید اور ایڈیشنل ڈائریکٹر پی اینڈ ڈی اطہر حسین نے شرکت کی ۔ معاہدہ کے زریعے اگلے تین سال تک جامعہ پشاور ملینئم پروجیکٹ عالمی فیوچراسٹڈیزاور ریسرچ پارٹسپیٹری تھنک ٹینک کا ملکی شراکت دار ہ آگاہی کے ساتھ ملکی جامعات کی طرح شراکت داری کرے گا-مشترکہ معاہدہ کا مقصد پاکستان میں مستقبل کی سوچ اور منصوبہ بندی ، پشاور اور ضمُشدہ اضلاع میں مستقبل کے رجحانات، مشکلات اور مواقعوں پر توجہ مرکوز کرنا ہے ۔ اس اقدام سے قیادت اور وسیع تر معاشرے میں پاکستان کے مستقبل کے بارے میں مفروضات کی جانچ پڑتال اور مستقبل کے خطرات کی نشاندہی کرنے کیلئے تاثرات کی کھوج لگائی جائے گی ۔ اس شراکت داری کا مقصد مستقبل کی بصیرت پیدا کرتے ہوے بہتر فیصلہ سازی کی تائید کرنا ، معیار ذندگی بہتر بنانا اور خطے میں معاشی مواقعوں میں اضافہ کرنا ہے ۔ اس موقع پر بات کرتے ہوے یونیورسٹی آف پشاور کے وائس چانسلر ڈاکٹر محمد آصف خان کا کہنا تھا “کہ آج ہم نے جس یاداشت پر دستخط کئے ہیں وہ ایک نقطہ نظر کی جانب ایک نئی شروعات ہیں جس میں پاکستان فیوچر انڈکس کیلئے بیس لائن سروے کلیدی کردار ادا کرسکتے ہیں ۔ اس موقع پر وی سی جامعہ پشاور 2022میں متوقع رپورٹ کے خدوخال میں قدرتی و انسانی آفات کو فیوچر انڈکس میں شامل کرنے کی تجویز دی پریوش چوہدری بانی و صدر آگاہی کا کہنا تھا کہ ہم متبادل مستقبل کی سوچ کے ذریعہ پالیسی کے نفاذ ، مستقبل کو درپیش مشکلات، اور مستقبل کے نقطہ نظر سے نمٹنے کیلئے توقعات کو بہتر بنا سکتے ہیں ۔ دو ہزار انیس سے اب تک آگاہی نے مختلف یو نیورسٹیز کے دو سو سے ذائد فیکلٹی ممبر زکو ریئل ٹائم ڈیلفی پر تربیت دی ہے ۔ جس کا مقصد تعلیمی اداروں کی تحقیق میں مدد اور انہیں فورسائیٹ ریسرچ کے بارے میں سمجھانا ہے ۔ آگاہی نے مقامی ماہرین کے ساتھ علمی جماعت سے تعلق رکھنے والون کیلئے یہ پلیٹ فارم تیار کیا ہے ۔ آگاہی کا تحقیقی کام بنیادی طور پر قومی اور بین الاقوامی سلامتی، آئی سی ٹی ، مسابقت، انسانی سرمائے کی ترقیاور گورننس پر مرکوز ہے ۔ آگاہی متعدد سرکردہ قومی اور بین الاقوامی اداروں کے ساتھ مل کر کام کر رہا ہے ۔ آگاہی پاکستان میں مستقبل کے منظرنامے کے منصوبے وضع کرنے میصروف عمل ہے ۔