وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے 80 ہزار کنال وسیع قطعہ اراضی پر محیط سی پیک سٹی نوشہرہ کے منصوبے پر تعمیراتی کام کا جلد اجراءیقینی بنانے کیلئے تمام تقاضے تیز رفتاری سے پور ے کرنے کی ہدایت کی ہے ۔ اُنہوںنے خصوصی طور پر منصوبے کیلئے حاصل کی گئی زمین کے مالکان کو ادئیگی کا عمل تین ماہ کے اندر مکمل کرنے اور سائٹ پر غیر قانونی کان کنی کے خلاف کریک ڈاﺅن کی ہدایت کی ہے ۔ وزیراعلیٰ نے منصوبے کی سائٹ پر سکیورٹی انتظامات کیلئے درکار پولیس نفری کی فوری فراہمی کی ہدایت کی ہے جبکہ سکیورٹی کیلئے طویل المدتی پلان کے تحت سی پیک سٹی نوشہرہ میں مخصوص پولیس سٹیشن کے قیام کی بھی منظوری دی ہے ۔ اُنہوںنے خیبرپختونخوا میں سیٹلائٹ ٹاﺅنز کے قیام کیلئے جامع پروپوزل تیار کرنے کی ہدایت کی ہے جو آئندہ سالانہ ترقیاتی پروگرام میں شامل کی جائے گی ۔وہ وزیراعلیٰ سیکرٹریٹ پشاور میں محکمہ ہاﺅسنگ خیبرپختونخوا کے جاری اور نئے اہم منصوبوں پر پیشرفت کے حوالے سے اجلاس کی صدارت کررہے تھے ۔ صوبائی وزیر برائے ہاﺅسنگ ڈاکٹر امجد علی ، صوبائی وزیراکبر ایوب خان ، سیکرٹری ہاﺅسنگ ، ایس ایم بی آر ایس ایس یو کے سربراہ صاحبزادہ سعید، فر نٹیر ورکس آرگنائزیشن اور دیگر متعلقہ اداروں کے نمائندگان ، ڈی پی او نوشہرہ اور دیگر متعلقہ حکام نے اجلاس میں شرکت کی ۔ وزیراعلیٰ کو نیا پاکستان ہاﺅسنگ سکیم کے حوالے سے بریفینگ دیتے ہوئے بتایا گیا کہ اس منصوبے کیلئے 730 ملین روپے کی سمری منظور ہو چکی ہے جس میں سے 200 ملین روپے رواں مالی سال کیلئے مختص کئے گئے ہیں۔ منصوبے کیلئے نان اے ڈی پی سکیم ، پی اینڈ ڈی کو بھیج دی گئی ہے ۔ آئندہ تین چار ماہ کے اند رمنصوبے کا باضابطہ اجراءکر دیا جائے گا۔