مشیرتعلیم خیبرپختونخوا ضیاء اللہ خان بنگش نے تعلیمی سال 2019ء بنوں ماڈل سکول اینڈ کالج کی طرف سے میٹرک امتحان میں بورڈ میں پہلی تین پوزیشنز اور ایف ایس سی میں پہلی اور دوسری پوزیشنزحاصل کرنے پرمبارکباد دی اور پورے سٹاف کیلئے ایک بونس تنخواہ کی منظوری دی۔ یہ منظوری آج ضیاء اللہ خان بنگش کے زیرصدارت بنوں ماڈل سکول اینڈکالج کے بورڈ آف گورنرز اجلاس کیے وقت دی گئی۔ سیکرٹری ایجوکیشن ندیم اسلم چوہدری، ایڈیشنل سیکرٹری افسرعلی شاہ اوردیگر بورڈ ممبران اس موقع پر موجود تھے۔ مشیرتعلیم نے صوبے کی تعلیمی سرگرمیوں کے حوالے سے کہاکہ وزیراعظم پاکستان اور وزیراعلی محمود خان کے وژن کے مطابق محکمہ تعلیم میں اصلاحات کی بدولت نایاں تبدیلی آئی ہے۔ سہولیات کی فراہمی یقینی بنائی گئی ہے اور نتائج میں بہتری کیساتھ ساتھ اب سرکاری سکول بورڈزمیں نمایاں پوزیشن حاصل کررہی ہے۔ بورڈ نے پرنسپل کی پوسٹ جلد ازجلد مشتہر کرنیکی احکامات جاری کردیے تاکہ سکول کی تعلیمی سرگرمیوں مزید بہتری یقینی ہوسکیں۔ مشیرتعلیم نے گورنمنٹ کی طرف سے مقررکردہ ریٹس کیمطابق ہاؤس رینٹ میں اور ایڈہاک ریلیف الاؤنس میں اضافے کی منظوری بھی دی جبکہ بورڈ نے مالی سال 2019-20 کے بجٹ کی بھی منظوری دی۔ اسی طرح بورڈ نے طلباء کے ٹیوشن فیس میں 5 فیصد اضافے اور میس فیس میں یومیہ 13 روپے کے اضافے کے اصولی فیصلے سے بھی اتفاق کیا۔ مشیرتعلیم نے گورنمنٹ کی طرف سے مقررکردہ کم سے کم تنخواہ کے رولز کے مطابق بنوں ماڈل سکول اینڈکالج کیلئے بھی اسی رولزکے مطابق کم سے کم تنخواہ 17,500 روپے مقرر کرنے کی ہدایت جاری کی اور بورڈز نے باقاعدہ طور پر اس کی منظوری بھی دی۔ جبکہ بورڈ نے ہرمہینے کے پہلے ہفتے میں لانگ ویکنڈکی منظوری بھی دی تاہم یہ چھٹی اس وقت ہوگی جب تعلیمی سرگرمیاں متاثر نہ ہو۔ بورڈ نے گذشتہ اجلاس میں کئے گئے فیصلوں کی منظوری بھی دی۔