خیبر پختونخوا میں پیر کے دن سے انسداد پولیو مہم کا باقاعدہ آغاز کیا جائے گا۔ چیف سیکرٹری خیبر پختونخواہ ڈاکٹر کاظم نیاز نے آج پشاور میں مہم کا افتتاح کیا۔ قومی انسداد پولیو مہم کے تحت قبائلی اضلاع سمیت صوبے کے تمام 35 اضلاع میں یہ مہم چلائی جائے۔ مہم کے دوران صوبے میں پانچ سال سے کم عمر کے 67 لاکھ 52 ہزار 326 بچوں کو پولیو سے بچاؤ کےقطرے پلائے جائیں گے۔ اس مقصد کے لئے صوبہ بھر میں 22 ہزار 825 ٹیمیں تشکیل دی گئی ہیں ۔ اس پولیو مہم کے لیے پچھلے ایک مہینے سے تیاری کی گئی ہے۔ صوبے سے پولیو وائرس کا خاتمہ صوبائی حکومت کی ترجیحات میں سر فہرست ہے جس کے تمام وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں۔ پولیو ویکسین کے خلاف پھیلا جانے والی بے بنیاد افواہوں کی وجہ سے اس مہم کو بہت زیادہ نقصان پہنچا ہے۔ پولیو کے خلاف ان بے بنیاد افواہوں کے تدارک کیلئے میڈیا اپنا موثر کردار ادا کرے۔ پولیو وائرس کا خاتمہ ایک قومی فریضہ ہے جس کے لئے میڈیا، اساتذہ، علماء اور معاشرے کے ہر طبقے کو اپنا انفرادی اور اجتماعی کردار ادا کرنا ہوگا۔ اس پولیو مہم کے سو فیصد اہداف کے حصول کے لئے ہر ضلع کے معروضی حالات کے مطابق مہم ترتیب دیے گئے ہیں۔ اگرچہ صوبے سے پولیو وائرس کا خاتمہ ایک بڑا چیلینج یے لیکن ناممکن نہیں اور صوبائی حکومت اس چیلینج سے برد ازما ہونے کے لئے ہر سطح پر پرعزم ہے۔