خیبر پختونخوا کی حکومت انسانی حقوق کے تحفظ کو یقینی بنانے کے لیے صوبائی کابینہ سے لیگل اتھارٹی ایکٹ اور ویمن پراپرٹی ایکٹ منظور کراچکی ہے اور اس کے علاوہ دیوانی کیسزکو جلد نمٹانے اور عام آدمی کی جلد اورسستے نصاف تک رسائی کے لیے سول پروسیجر کورٹس میں ترامیم سمیت دیگر قوانین میں مزید بہتری کیلئے کاؤشیں کر رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار وزیر قانون و پارلیمانی اموراور انسانی حقوق سلطان محمد خان نے منگل کے روز پشاور میں انسانی حقوق کے عالمی دن کے حوالے سے منعقدہ تقریب سے بحیثیت مہمان خصوصی خطاب کرتے ہوئے کیا۔تقریب میں وزیر اعلی ٰکے مشیر برائے ابتدا ئی و ثانوی تعلیم ضیااللہ بنگش،وزیراعلیٰ کے معاون خصوصی برائے سائنس و انفارمیشن ٹیکنالوجی کامران بنگش اور دیگر اراکین صوبائی اسمبلی کے علاوہ سیکرٹری قانون اور یو این ڈی پی کے عہدیداران سمیت سول سوسائٹی کے اراکین نے شرکت کی۔وزیر قانون تقریب سے اپنے خطاب میں کہا کہ حکومت نے صوبائی کابینہ سے لیگل اتھارٹی ایکٹ اور ویمن پراپرٹی ایکٹ منظور کراچکی ہے جس سے انسانی حقوق کو عمومااور خواتین کے حقوق کو خصوصاً تحفظ یقینی بنایا جاسکے گا۔ انہوں نے کہاکہ  لیگل اتھارٹی ایکٹ سے معاشرے کے نادار اور غریب طبقے کو قانونی معاونت فراہم کی جائے گی انہوں نے ویمن پراپرٹی ایکٹ کے حوالے سے کہا کے خواتین کو جائیداد میں حصہ دلوانے کو یقینی بنایا گیا ہے اس حوالے سے انہوں نے مزید کہا کہ صوبائی خاتون محتسب کو بااختیار بنایا گیا ہے کہ وہ خواتین کو جائیداد میں حصہ دلانے سے متعلق ڈپٹی کمشنر کو موصول ہونے والی شکایات کے جلد ازالے کی ہدایت دے۔  سلطان محمد خان نے مزید کہا کہ سول پروسیجرکورٹس کے قوانین میں ترامیم لا رہے ہیں تاکہ دیوانی کیسز میں عوام کو جلد اور سستا انصاف فراہم کیا جائے وزیر قانون نے مزید کہا کہ وزیراعظم عمران خان نے اپنی پہلی تقریر میں معاشرے کے کمزور طبقے کا خیال رکھنے کی ہدایت کی جس پر خیبرپختونخوا کی صوبائی حکومت من و عن عمل پیرا ہے سلطان محمد خان نے کہا کہ خیبر پختونخوا کی حکومت کو یہ اعزاز بھی حاصل ہے کہ سب سے زیادہ قانون سازی ان کی حکومت نے کی ہے۔ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کا ذکر کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہاکہ  128 دن سے اب تک کرفیو بنیادی انسانی حقوق کی کھلم کھلا خلاف ورزی ہے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے کشمیریوں کے بنیادی حقوق کا مقدمہ جنرل اسمبلی کے فلور پر بہت اچھے انداز میں لڑا۔تقریب سے وزیر اعلیٰ کے مشیر تعلیم ضیااللہ بنگش اور دیگر صوبائی اراکین سمیت سیکرٹری قانون نے بھی تقریب سے خطاب کیا۔ بعد ازاں تقریب کے شرکاء نے انسانی حاقوق کے حوالے ایک ریلی بھی نکا لی۔